Media Office Hizb ut-Tahrir Pakistan

The Blessed Revolution of Ash-Sham

 

Saturday, 09th Jumad ul Awwal 1436 AH                                   28/02/2015 CE                           No: PR15016

Press Release

The Blessed Revolution of Ash-Sham

Raheel-Nawaz Regime Uses Sectarianism to Support Collapsing Tyrant of Syria

At a time that the Raheel-Nawaz regime is claiming that it denounces the evil of sectarianism, it is using sectarianism to support the collapsing regime of the tyrant of Syria, Bashar al-Asad. For four years the Muslims of Syria have been striving to overthrow the Bashar regime in order to secure the return of the Khilafah Rashida. However, rather than making way for the people's aspirations, the brutal regime has been supported by the foreign Western nations and their agents in Muslim Lands including Iran's regime. The crimes of the regime include slaughter of children and rape of women in order to prevent the return of Islamic rule. It is now clear that the regime in Pakistan is also involved in providing criminal support of a tyrant. Numerous reports have confirmed that the regime is sending Shia fighters to support Bashar al-Asad against the Muslims of Syria, using sectarianism for evil ends. Moreover, not only is the regime supporting the Bashar regime physically, politically the regime is supporting Bashar's false claim that those who work to restore Islam as a rule are supported by foreigners, even though his own regime is supported openly by the foreign powers. As confirmed by the Syrian Arab News Agency in its report of 23 February 2015, Pakistan's Senate Chairman Syed Nayyer Hussain Bokhari declared in a meeting with the Syrian Assembly Speaker Mohammad Jihadal-Laham, said that, “As member of the United Nations, Pakistan believes in all nations’ right to independent decision-making and rejects foreign interference in sovereign countries.”

Rather than siding with Islam and Muslims, the Raheel-Nawaz regime regime has sided with the West and the Syrian tyrant Bashaar in their war against the return of the Khilafah. Syrian Muslims have been calling for help from every Muslim country, but the Raheel-Nawaz regime has kept our soldiers in their barracks, though it is willing to send them to far flung places like Liberia upon the request of its Western masters. Hizb ut-Tahrir Wilayah Pakistan warns the traitors in the political and military leadership that whatever efforts they exhaust against the establishment of Khilafah, it is going to happen soon Insha Allah. If not in Syria soon it will be here in Pakistan باذن الله and the Ummah will not forget those who assisted her enemies and most importantly nor will Allah SWT.

And Hizb ut-Tahrir calls upon the sincere in Pakistan’s armed forces for the Nussrah to establish Khilafah, reminding them that it upon us to extend the Muslims of Syria the support of our armed forces, the seventh largest in the world, armed with nuclear weapons. RasulAllah صلى الله عليه و سلم said,

مَا مِنِ امْرِئٍ يَخْذُلُ امْرَأً مُسْلِماً عِنْدَ مَوْطِنٍ تُنْتَهَكُ فِيهِ حُرْمَتُهُ وَيُنْتَقَصُ فِيهِ مِنْ عِرْضِهِ إِلاَّ خَذَلَهُ اللَّهُ عَزَّ وَجَلَّ فِى مَوْطِنٍ يُحِبُّ فِيهِ نُصْرَتَهُ، وَمَا مِنِ امْرِئٍ يَنْصُرُ امْرَأً مُسْلِماً فِى مَوْطِنٍ يُنْتَقَصُ فِيهِ مِنْ عِرْضِهِ وَيُنْتَهَكُ فِيهِ مِنْ حُرْمَتِهِ إِلاَّ نَصَرَهُ اللَّهُ فِى مَوْطِنٍ يُحِبُّ فِيهِ نُصْرَتَهُ

There is no man who lets a Muslim down in a situation where his honor is disparage and his sanctity violated, but that Allah will abandon him in a situation in which he wished for His Support. And there is no man who helps a Muslim in a situation in where his honor is disparaged and his sanctity violated except that Allah will help him in a situation in which he wished for His Support.”

[Ahmad]

Media Office of Hizb ut-Tahrir in the Wilayah of Pakistan

 

ہفتہ، 09 جمادی الاول ، 1436ھ                          28/02/2015                              نمبرPR15016:

شام کا بابرکت انقلاب

راحیل-نواز حکومت شام کے جابر کی گرتی ہوئی حکومت کو سہارا دینے کے لئے فرقہ واریت کو استعمال کررہی ہے

        ایک طرف راحیل-نواز حکومت فرقہ واریت کو ختم کرنے کا عہد کرتی نظر آتی ہے لیکن دوسری جانب شام کے جابر بشار کے گرتی ہوئی حکومت کو بچانے کے لئے فرقہ واریت کو استعمال بھی کررہی ہے۔ پچھلے چار سالوں سے شام کے مسلمان ظالم بشار کی حکومت کو گرانے کی شدید جدوجہد کررہے ہیں تا کہ خلافت راشدہ کی واپسی کو یقینی بنائیں۔ لیکن بجائے اس کے کہ لوگوں کی خواہش کے سامنے سر جھکا دیا جاتا ، اس جابر حکومت کو مغربی حکومتیں اور ایجنٹ مسلم حکمران جن میں ایران بھی شامل ہے ، حمایت فراہم کررہے ہیں۔ خلافت کے قیام کو روکنے کے لئے شام کی جابر حکومت بچوں کو قتل اور عورتوں کی عفت و عصمت کی توہین جیسے انتہائی سنگین جرائم کررہی ہے۔ یہ بات واضح ہے کہ پاکستان کی حکومت بھی شام کی قاتل حکومت کو حمایت فراہم کرنے کے جرم میں شریک ہے۔ ایسے کئی شواہد موجود ہیں جن سے یہ ثابت ہوتا ہے کہ یہ حکومت شیعہ جنگجوؤں کو بشار کے حمایت میں شام کے مسلمانوں سے لڑنے کے لئے بھیج رہی ہے۔ اس کے علاوہ نہ صرف یہ کہ حکومت بشار کی سیاسی و عملی معاونت کررہی ہے بلکہ بشار کے اس جھوٹے دعوے کی بھی حمایت کررہی ہے کہ جو لوگ اسلام کے حکمرانی کی بحالی کے لئے کام کررہے ہیں انہیں بیرونی جنگجوؤں کی مدد و معانت حاصل ہے جبکہ حقیقت یہ ہے کہ خود بشار کی حکومت کو بیرونی طاقتیں کھلم کھلا مدد فراہم کررہی ہیں اور اس بات کا ثبوت شامی عرب نیوز ایجنسی نے 23 فروری 2015 کی رپورٹ میں بیان کیا ۔ اس رپورٹ کے مطابق پاکستان کی سینٹ کے چیرمین سید نئیر حسین بخاری نے شام کی اسمبلی کے سپیکر محمد جیحادل لحم سے ملاقات کے دوران اعلان کیا کہ "اقوام متحدہ کا رکن ہونے کی حیثیت سے پاکستان تمام اقوام کی آزادانہ فیصلہ سازی کے حق اور خودمختار ممالک میں بیرونی مداخلت کی مخالفت کرتا ہے"۔

        راحیل-نواز حکومت نے اسلا م اور مسلمانوں کا ساتھ دینا گوارا نہیں کیا بلکہ خلافت کے قیام کو روکنے کی مغرب اور جابر بشار کی جنگ کا حصہ بننا قبول کر لیا۔ شام کے مسلمان مسلسل مسلم ممالک سے مدد کے لئے پکار کررہے ہیں لیکن راحیل-نواز حکومت نے ہماری افواج کو بیرکوں میں بِٹھا رکھا ہے لیکن اگر اِن کےمغربی آقا اپنے مفادات کی تکمیل کے لئے مسلم افواج کو حرکت میں لانے کا مطالبہ کریں تو لائبیریا جیسے دور دزار کے ملک بھی اپنی افواج کو فوراً روانا کردیتے۔ حزب التحریر ولایہ پاکستان سیاسی و فوجی قیادت میں موجود غداروں کو خبردار کرتی ہے کہ تم خلافت کے قیام کو کو روکنے کی چاہے کتنی ہی زبردست کوشش کیوں نہ کرلو وہ انشاء اللہ جلد ہی قائم ہو گی۔ اور اگر وہ شام میں قائم نہیں ہوتی تو اللہ کے حکم سے پاکستان میں قائم ہوگی اور امت اُن لوگوں کو کبھی نہیں بھولے گی جنھوں نے اُس کے دشمنوں کا ساتھ دیا تھا اور سب سے اہم یہ کہ اللہ تعالٰی تو بالکل بھی بھولنے والے نہیں ہیں۔

        حزب التحریر افواج پاکستان میں موجود مخلص افسران کو پکارتی ہے کہ وہ خلافت کے قیام کے لئے نصرۃ فراہم کریں اور انھیں یادہانی کراتی ہے کہ یہ ہم پر لازم ہے کہ شام کے مسلمانوں کی اپنی افواج کے ذریعے مدد کریں جو ایٹمی اسلحے سے لیس دنیا کی ساتویں بڑی فوج ہے۔ رسول اللہ نے فرمایاکہ:

مَا مِنِ امْرِئٍ يَخْذُلُ امْرَأً مُسْلِماً عِنْدَ مَوْطِنٍ تُنْتَهَكُ فِيهِ حُرْمَتُهُ وَيُنْتَقَصُ فِيهِ مِنْ عِرْضِهِ إِلاَّ خَذَلَهُ اللَّهُ عَزَّ وَجَلَّ فِى مَوْطِنٍ يُحِبُّ فِيهِ نُصْرَتَهُ، وَمَا مِنِ امْرِئٍ يَنْصُرُ امْرَأً مُسْلِماً فِى مَوْطِنٍ يُنْتَقَصُ فِيهِ مِنْ عِرْضِهِ وَيُنْتَهَكُ فِيهِ مِنْ حُرْمَتِهِ إِلاَّ نَصَرَهُ اللَّهُ فِى مَوْطِنٍ يُحِبُّ فِيهِ نُصْرَتَهُ

"ایسا کوئی شخص نہیں ہے جو مسلمان کو اس صورتحال میں بے یارو مدد گار چھوڑ دے جہاں اس کو بے عزت کیا جائے اور اس کی حرمت کو پامال کیا جائے (اور اگر وہ ایسا کرے) تو اللہ اسے اس وقت بے یارو مدد گار چھوڑ دے گا جب وہ اللہ سے مدد کا طلبگار ہوگا۔ اور ایسا کوئی شخص نہیں جو مسلمان کی اس وقت مدد کرے جب اس کو بے عزت کیا جارہا ہو اور اس کی حرمت کو پامال کیا جارہا ہو کہ اللہ اس کی اس وقت مدد فرمائیں گے جب وہ اللہ سے مدد کا طلب گار ہوگا"

(احمد)۔

پاکستان میں حزب التحریر کا میڈیا آفس


Today 3102 visitors (10035 hits) Alhamdulillah
=> Do you also want a homepage for free? Then click here! <=