Media Office Hizb ut-Tahrir Pakistan

National Action Plan is American Plan

 

Thursday, 27th Jumad ul Thani 1436 AH                                   16/04/2015 CE                           No: PR15028

Press Release

National Action Plan is America’s Plan

Raheel-Nawaz Regime Pursues Path of Treachery by Trying to Prevent Return of Khilafah

Breaking news on Dunya and three other channels on 16th April 2015 at 1.00 am mentioned that Salman Jagranvi, who is “part of a banned party”, was arrested. It was also noted that this is the very first case registered under new “Counter-Terrorism” department. The news ticker on Geo mentioned that this new department has filed its first case against Salman Jagranvi “for distributing hate literature”

It is well known that Hizb ut-Tahrir is a political party whose ideology is Islam and who includes members regardless of race, school of thought and gender. Hizb ut-Tahrir’s literature calls for the unity of Muslim Ummah and the establishment of Khilafah as a means to implement Islam comprehensively an obligated by Allah (swt). This is what is being termed “hate literature”. Furthermore, in order to protect the interests of Islam and Muslim Ummah Hizb accounts rulers and uncovers their treacheries, who, being bankrupt of a single word of truth to put forward in favour of their treacherous actions have started declaring political dissent and accountability as instigation of “hate” and “terrorism” so that Muslims abandon the command of RasulAllah (saaw) to raise the word of truth in front of a tyrant rulers as it is the greatest Jihad.

Salman Jagranvi was seized from the famous Jagranvi Clinic on 13th April 2015 at 5:30pm in Raiwind, where his family treats people with various ailments, not whilst distributing any literature. His detention was reported to the police help line 15 immediately. This fact reveals that the Raheel-Nawaz regimes agencies know that they don’t have any ethical, legal or, most importantly, Islamic grounds to take action against Hizb. Therefore they resort to lies and slander. Worse, some sections of the media again disregarded the ethics of conveying news and propagated the news from these liars even though Allah swt said,

إِن جَاءَكُمْ فَاسِقٌ بِنَبَإٍ فَتَبَيَّنُوا

"If a fasiq comes to you with news, verify it" (Al-Hujurat: 06)

Yet not one media outlet checked with the Hizb although a number of them are in the vicinity of the Jagranvi house.

The National Action Plan is American plan. America is fearful of the return of the Khilafah so the first case is registered under the new “counter terrorism” department is against Hizb ut-Tahrir while Hizb undertakes only the political and intellectual course for the establishment of Khilafah in compliance with the Sunnah of Muhammad (Saaw). The regime and its masters in Washington will fail to prevent the imminent return of the Khilafah inshaaAllah for it is the Bushra (glad tiding) of RasulAllah (saaw) and it is the promise of Allah swt that He will replace oppressive rulers with those who believe and do good actions. Hizb ut-Tahrir will continue to command the respect of the Ummah for its firm stance before the tyrants despite all hardships.

وَالْعَاقِبَةُ لِلْمُتَّقِينَ

"…and the end-result is in favor of those who fear Allah". (Al-A’raf:126)

Media of Hizb ut-Tahrir in the Wilayah of Pakistan

 

جمعرات، 27 جمادی الثانی ، 1436ھ                                   16/04/2015                              نمبرPR15028:

نیشنل ایکشن پلان امریکی ایکشن پلان ہے

راحیل-نواز حکومت خلافت کے قیام کی راہ میں روکاوٹ کھڑی کر کے غداری کی مرتکب ہو رہی ہے

        آج 16 اپریل 2015 کی صبح ایک بجے دنیا ٹی وی سمیت تین چینلز نے بریکنگ نیوز نشر کی کہ سلمان جگرانوی کو گرفتار کرلیا ہے جس کا تعلق ایک کالعدم جماعت سے ہے اور کاونٹر ٹیرر ازم ڈیپارٹمنٹ کے تحت پہلا مقدمہ درج کرلیا گیاہے۔ جیو نیوز نے ٹِکر نشر کیا کہ حال ہی میں قائم ہونے والے کاونٹر ٹیرر ازم ڈیپارٹمنٹ نے سلمان جگرانوی کے خلاف نفرت انگیز مواد تقسیم کرنے پر پہلا مقدمہ قائم کرلیا ہے۔

        یہ بات مشہور و معروف ہے کہ حزب التحریر ایک سیاسی جماعت ہے جس کا نظریہ اسلام ہے اور ہر رنگ، نسل، جنس اور مسلک کے لوگ اس میں شامل ہیں۔ حزب التحریر کا شائع کردہ کوئی بھی مواد کسی بھی طرح نفرت آنگیز نہیں ہوسکتا کیونکہ حزب مسلم امہ کی یکجہتی اور اس کو عملی شکل دینے کے لئے ایک خلافت کے قیام کی دعوت دیتی ہے۔اس کے علاوہ حزب اسلام اور امت مسلمہ کے مفاد کے تحفظ کے لئے حکمرانوں کا احتساب اور ان کی غداریوں کو بے نقاب کرتی ہے ۔ چونکہ حکمرانوں کے پاس اپنی غداریوں کے دفاع میں ایک بھی سچی دلیل  موجود نہیں تو اب انہوں نے سیاسی اختلاف رائے اور احتساب کو "نفرت انگیز" اور "دہشت گردی" قرار دینا شروع کردیا ہے تا کہ مسلمان رسول اللہ کے اس قول پر عمل کرنا ہی چھوڑ دیں کہ بہترین جہاد ظالم حکمران کے سامنے کلمہ حق کہنا ہے۔

        سلمان جگرانوی کو نام نہاد نفرت انگیز مواد کو تقسیم کرتے ہوئے نہیں بلکہ 13 اپریل 2015 کو شام 5:30 بجے رائے ونڈ میں موجود ان کے مشہور خاندانی مطب، جگرانوی دواخانہ سے گرفتار کیا گیا تھا اور ان کی گرفتاری کی رپورٹ پولیس ہیلپ لائن 15 پر کردی گئی تھی۔ یہ حقیقت ہی یہ ثابت کرنے کے لئے کافی ہےکہ راحیل-نواز حکومت کی ایجنسیوں نے اس بات کو جانتے ہوئے کہ ان کے پاس حزب کے خلاف کاروائی کرنے کا کوئی اخلاقی، قانونی اور سب سے بڑھ کر اسلامی جواز موجود نہیں جو انہوں نے ایک صریح جھوٹ کا سہارا لیا ہے۔ لیکن اس بھی بڑھ کر افسوس ناک بات یہ ہے ایک بار پھر میڈیا کے کچھ اداروں نے اپنی اخلاقی، پیشہ وارانہ اور اسلامی ذمہ داری کو پورا نہیں کیا اور حکومتی ایجنسیوں کے جھوٹے پروپیگنڈے کو پھیلانے میں اپنا حصہ ڈالا جبکہ اللہ سبحانہ و تعالٰی فرماتے ہیں،

إِن جَاءَكُمْ فَاسِقٌ بِنَبَإٍ فَتَبَيَّنُوا

"اگر تمہیں کوئی فاسق خبر دے تو تم اس کی اچھی طرح تحقیق کرلیا کرو" (الحجرات:6)۔

        لیکن خبر چلانے والے میڈیا ہاوسز نے حزب سے اس خبر کی سچائی جاننے کے لیے رابطہ نہیں کیا جبکہ جگرانوی خاندان کا تو گھر ہی کئی میڈیا ہاوسز کے پڑوس میں واقع ہے۔

        اس بات میں کوئی شک و شبہ نہیں کہ نیشنل ایکشن پلان امریکی ایکشن پلان ہے۔ اس حقیقت کا اس سے بڑھ کر اور کیا ثبوت ہوسکتا ہے کہ چونکہ امریکہ خلافت کے قیام سے خوفزدہ ہے اس لیے کاونٹر ٹیرر ازم ڈیپارٹمنٹ کے تحت پہلا مقدمہ حزب التحریر کے خلاف درج کیا گیا ہے جو خلافت کے قیام کے لیے رسول اللہ کی سنت کے مطابق صرف سیاسی و فکری جدوجہد کرتی ہے ۔ انشاء اللہ امریکہ اور راحیل-نواز حکومت خلافت کے قیام کو روک نہیں سکیں گے کیونکہ یہ رسول اللہ کی بشارت ہے اور اللہ سبحانہ و تعالٰی کا وعدہ ہے کہ وہ موجودہ ظالم حکمرانوں کو ہٹائے گا۔ حزب التحریر تمام تر مشکلات کے باوجود ظالم حکمرانوں کے سامنے مضبوطی سے کھڑی رہے گی اور امت کی نظروں میں باعزت رہے گی کیونکہ اللہ سبحانہ و تعالٰی فرماتے ہیں،

وَالْعَاقِبَةُ لِلْمُتَّقِينَ

"اور آخری کامیابی ان ہی کی ہوتی ہے جو اللہ سے ڈرتے ہیں" (الاعراف:128)

ولایہ پاکستان میں حزب التحریر کا میڈیا آفس


Today 1090 visitors (3887 hits) Alhamdulillah
=> Do you also want a homepage for free? Then click here! <=