Media Office Hizb ut-Tahrir Pakistan

Raheel Nawaz Regime Exploits Imam of Kaabah Visit to Further American War on Islam


Tuesday, 09th Rajab 1436 AH                            28/04/2015 CE                           No: PR15031

Press Release

America's Campaign to Suppress Islam in Pakistan

Raheel-Nawaz Regime Exploits Imam of Ka'abah Visit to Further America's War on Islam

The Raheel-Nawaz regime in collaboration with their companion in slavery to America, the Saudi government of King Salman, arranged for the Imam of Kaaba to Pakistan to exploit the religious emotions of Muslims and to deceive them in to supporting the tyrannical regime of Saudi Arabia and the criminal rulers of Pakistan. Distributing rugs with Quranic verses and copies of the Quran among Pakistani politicians, the Imam of Kaaba used the media attention that the regime provided for him to peddle out the American line on the issue of Yemen. He also supported America's war on Islam being fought in the tribal region by pro-American rulers.

Is this what the regime should arrange for the Ulema to speak about?! Is it not aware of the American occupation of Afghanistan and its violation of Islam and the rights of Muslims? Does the regime care about the current status of Palestine or does it consider the Jewish occupation of the blessed land as legitimate? Does the regime not know about Syria and the mass killings of hundreds of thousands of Muslims at the hands of the tyrant Bashar? So why did the regime not benefit of the Imam of the House of Allah (swt) to motivate the Muslim armies for these Islamic causes and to end the misery of Muslims across the globe? Or is it that the regime only approves for Ulema to speak for the pleasure of its masters in Washington and will silence any voice for Islam, Jihad and Khilafah?

O Yes! The Kaaba is dear to us and we yearn to visit it because our Prophet (SAW) ordered us to do so. But we seek the pleasure of Allah by following the Deen completely. We also remember the Hadith of the Prophet (SAW) narrated by Abdullah bin Amr:

حَدَّثَنَا عَبْدُ اللَّهِ بْنُ عُمَرَ , قَالَ : رَأَيْتُ رَسُولَ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ يَطُوفُ بِالْكَعْبَةِ , وَيَقُولُ : " مَا أَطْيَبَكِ وَأَطْيَبَ رِيحَكِ , مَا أَعْظَمَكِ وَأَعْظَمَ حُرْمَتَكِ , وَالَّذِي نَفْسُ مُحَمَّدٍ بِيَدِهِ , لَحُرْمَةُ الْمُؤْمِنِ أَعْظَمُ عِنْدَ اللَّهِ حُرْمَةً مِنْكِ مَالِهِ وَدَمِهِ وَأَنْ , نَظُنَّ بِهِ إِلَّا خَيْرًا

"I saw the Messenger of Allah () circumambulating the Ka’bah and saying: ‘How good you are and how good is your fragrance; how great you are and how great is your sanctity. By the One in Whose Hand is the soul of Muhammad, the sanctity of the believer is greater before Allah than your sanctity, his blood and his wealth, and to think anything but good of him."

[Ibn Majah]

It is upon the righteous Ulema and Islamic politicians to speak the truth and categorically reject the bidding of the rulers, saving themselves from disgrace in this life and the next. It is upon them to account these rulers, advise them through Islam and not fear their wrath, for it is not befitting for the one who has knowledge of the Deen that he puts the fear of the tyrant before the fear of Allah.

إِنَّمَا يَخْشَى ٱللَّهَ مِنْ عِبَادِهِ ٱلْعُلَمَاءُ

“It is only those who have knowledge among His servants that fear Allah”

(Fatir 35:28)

Media Office of Hizb ut-Tahrir in the Wilayah of Pakistan

بدھ، 09 ذی القعد ، 1436ھ                              28/04/2015                                نمبرPR15032:

پاکستان میں اسلام کو کچلنے کی امریکی مہم

راحیل-نواز حکومت اسلام کے خلاف امریکی جنگ کو جاری رکھنے کے لئے امام کعبہ کے دورے کو استعمال کررہی ہے

        راحیل-نواز حکومت  اور بادشاہ سلمان کی سعودی حکومت، جو دونوں ہی امریکہ کی غلام ہیں، نے امام کعبہ کے دورہ پاکستان کا اہتمام کیا تا کہ مسلمانوں کے مذہبی جذبات  اور اسلام سے ان کی محبت کو سعودی عرب کے جابر اور پاکستان کے مجرم حکمرانوں کی حمایت کے لئے استعمال کیا جائے۔ پاکستانی سیاست دانوں میں قرآنی آیات  سے مزین قالین اور قرآنی نسخے بانٹتے ہوئے امام کعبہ نے میڈیا کی توجہ کو، جو حکومت نے  مہیا کی تھی،  یمن کے مسئلے پر امریکی موقف کی تشہیر کے لئے استعمال کیا ۔ انہوں نے  قبائلی علاقوں میں امریکی ایجنٹ حکمرانوں کی مدد سے لڑی جانے والی امریکہ کی اسلام کے خلاف جنگ کی بھی حمایت کی۔

        کیا حکومت کو اس کام کے لئے علماء کے دوروں کا اہتمام کرنا چاہیے؟ کیا حکمران افغانستان پر امریکی قبضے ، اسلام کی تضحیک اور مسلمانوں  کے حقوق کی پامالی سے بے خبر ہیں؟ کیا حکمرانوں کو فلسطین کی فکر  نہیں یا وہ مقدس سرزمین پر یہود کے قبضے کو جائز سمجھتے ہیں؟ کیا وہ شام  اورجابر   بشار کے ہاتھوں قتل ہونے والے لاکھوں مسلمانوں  سے بے خبر ہیں؟تو پھر  حکومت نے امام کعبہ کے دورے کو مسلم افواج کے خون کو گرمانے  کے لئے کیوں استعمال نہیں کیا تا کہ وہ فلسطین کی مقدس سرزمین کی آزادی  اور دنیا بھر میں مسلمانوں کی تباہ کن صورتحال کو تبدیل کرنے کے لئے  حرکت میں آئیں؟ یا پھر یہ کہ حکومت صرف واشنگٹن میں بیٹھے اپنے آقاؤں کی خوشنودی کے لئے ہی علماء کے دوروں کا اہتمام کرتی ہے اور اسلام ، جہاد اور خلافت کے لیے اٹھنے والی ہر آواز کو خاموش کردیتی ہے؟

        یقیناً کعبہ ہمیں انتہائی عزیز ہے اور ہم اس کی زیارت کرنے کی شدید چاہت رکھتے ہیں کیونکہ ہمارے نبی نے ہمیں ایسا کرنے کا حکم دیا ہے۔ لیکن ہم پورے کے پورے دین پر عمل کر کے اللہ سبحانہ و تعالٰی کی رضا حاصل کرنا چاہتے ہیں۔ ہم رسول اللہ کی اس حدیث کو بھی یا د رکھتے ہیں جو عبداللہ  بن عمر نے روایت کی کہ،

((حَدَّثَنَا عَبْدُ اللَّهِ بْنُ عُمَرَ , قَالَ : رَأَيْتُ رَسُولَ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ يَطُوفُ بِالْكَعْبَةِ , وَيَقُولُ : " مَا أَطْيَبَكِ وَأَطْيَبَ رِيحَكِ , مَا أَعْظَمَكِ وَأَعْظَمَ حُرْمَتَكِ , وَالَّذِي نَفْسُ مُحَمَّدٍ بِيَدِهِ , لَحُرْمَةُ الْمُؤْمِنِ أَعْظَمُ عِنْدَ اللَّهِ حُرْمَةً مِنْكِ مَالِهِ وَدَمِهِ وَأَنْ , نَظُنَّ بِهِ إِلَّا خَيْرًا))

"میں نے رسول اللہ کو کعبہ کا طواف کرتے دیکھا یہ کہتے ہوئے، " تم کتنے شاندار ہو اور تمہاری خوشبو کتنی شاندار ہے، تم کتنے عظیم ہو اور تمہارے حرمت کتنی عظیم ہے لیکن اس ذات کی قسم جس کے ہاتھ میں محمد کی جان ہے مؤمن کی حرمت اللہ کی نظر میں تمہاری حرمت سے زیادہ ہے: اس کی جان و مال (کی حرمت) اور اس کے بارے میں صرف اچھی سوچ رکھنے(کی حرمت)" (ابن ماجہ)۔

        علماء اور مسلم سیاست دانوں پر لازم ہے کہ وہ  سچ اور حق کا ساتھ دیں اور حکمرانوں کے موقف کو مسترد کردیں  اور دنیا و آخرت کی ذلت و رسوائی سے خود کو محفوظ کرلیں۔ ان پر لازم ہے کہ وہ حکمرانوں کا احتساب کریں ، انہیں اسلام سے نصیحت کریں  اور ان کے غضب سے خوف نہ کھائیں کیونکہ وہ جو دین کا علم رکھتے ہیں یہ بات ان کے شایان شان نہیں کہ وہ اللہ سے زیادہ حکمرانوں سے خوف کھائیں۔

إِنَّمَا يَخْشَى ٱللَّهَ مِنْ عِبَادِهِ ٱلْعُلَمَاءُ

"اللہ سے اس کے وہی بندے ڈرتے ہیں جو علم رکھتے ہیں" (فاطر:28)

پاکستان میں حزب التحریر کا میڈیا آفس


Today 3102 visitors (10095 hits) Alhamdulillah
=> Do you also want a homepage for free? Then click here! <=