Media Office Hizb ut-Tahrir Pakistan

America's War on the Muslims of Syria

 

Friday, 17th Muharram 1437                             30/10/2015 CE                           No: PR15080

Press Release

America's War on the Muslims of Syria

Regime Welcomes Russia's Spilling of Blood to Prevent the Return of the Khilafah

Adviser on Foreign Affairs, Sartaj Aziz, on 28th October held a press conference with the visiting secretary of Iran’s Supreme National Security Council, Ali Shamkhani, after their talks at the Foreign Office. Regarding Russian air strikes in Syria, Mr Aziz said Pakistan was closely following the situation and further stated that, “Russian entry into Syrian conflict is very significant. There are indications that it will lead to a positive outcome in the shape of a political settlement.”

If the Raheel-Nawaz regime were sincere to the issue of Syria, which it already claims to be following closely, it would have categorically condemned Russia's aggression on the Muslims of Syria. Since March of 2011, the Muslims of Syria, in ash-Shaam, have risen up against their ruler, President Bashar of the ruling Al-Assad family, whom America bought to power nearly forty years ago. The Muslims have arisen demanding Islam as a political solution, with many of them calling الشعب يريد الخلافة من جديد The people want the Khilafah” and raising the black and white flags of the coming Khilafah. Deprived of sleep at the thought of the return of the Khilafah, Russia in collusion with America is military supporting the tyrant Bashar. This is even though the Al-Assad regime has destroyed towns and villages. It has slaughtered tens of thousands, not sparing the women, the elderly and the children. Its thugs have tortured the men, raped the women and abducted the children, seizing them in the streets from the arms of their mothers.

Not only that, were the regime sincere to the Muslims of Syria, rather than extending red carpet treatment for the Iranian official, it would have made him turn back on his heels, condemning the Iranian regime for its black role in Syria. Iran has assisted America in its war against the Muslims of Syria, both directly through its military personnel as well as through its proxy, Lebanon's Hizbullah. So much for the treacherous rulers of Pakistan, who applaud and welcome those who fight the return of the Khilafah!

Hizb ut-Tahrir calls upon the officers of Pakistan's armed forces to perform their duty and grant the Nussrah to Hizb ut-Tahrir for the return of the Khilafah. Only then will there be an end of the treachery of the current rulers, who support and applaud the killing of Muslims who seek to be ruled by Islam.

بَلْ نَقْذِفُ بِٱلْحَقِّ عَلَى ٱلْبَاطِلِ فَيَدْمَغُهُ

“Nay, We hurl the Truth against falsehood, and it knocks out its brain”

(Al-Anbiya:18)

Media Office of Hizb ut-Tahrir in the Wilayah of Pakistan

 

منگل، 17 محرم، 1437ھ                                30/10/2015                                نمبرPR15080 :

شام کے مسلمانوں کے خلاف امریکی جنگ

حکومت کا روس کے ہاتھوں مسلمانوں کے قتل عام کو خوش آئیند قرار دینا خلافت کی واپسی کو روکنے کی کوشش ہے

        28 اکتوبر 2015 کو خارجہ امور کے مشیر سرتاج عزیز نے پاکستان کے دورے پر آئے ایران کی سپریم نیشنل سیکیورٹی کونسل کے سیکریٹری علی شامخانی سے ملاقات کے بعد دفتر خارجہ میں ایک پریس کانفرنس سے خطاب کیا۔ سرتاج عزیز نے شام میں روسی ہوائی حملوں کے حوالے سے کہا کہ پاکستان بغور صورتحال کا جائزہ لے رہا ہے اور مزید کہا کہ "شام کے مسئلے میں روس کی مداخلت انتہائی اہم ہے۔ کچھ ایسے اشارے ملے ہیں کہ اس کا انجام مثبت سیاسی تصفیے کی صورت میں ہوگا"۔

        اگر راحیل-نواز حکومت شام کے مسئلہ سے مخلص ہوتی، جس کے متعلق ان کا یہ کہنا کہ وہ اس کا بغور جائزہ لے رہے ہیں، تو وہ واضح طور شام کے مسلمانوں کے خلاف روسی جارحیت کی مذمت کرتی۔ مارچ 2011 سے شام کے مسلمان صدر بشار کے حکمران خاندان کے اقتدار کے خلاف اٹھ کھڑے ہوئے ہیں، جس کو امریکہ چالیس سال قبل اقتدار میں لایا تھا۔ مسلمان اٹھ کھڑے ہوئے، سیاسی حل کے طور پر اسلام کا مطالبہ کرنے لگے، یہ نعرہ عام ہوگیا، الشعب يريد الخلافة من جديد "لوگ خلافت چاہتے ہیں" اور انھوں نے آنے والی خلافت کے کلمہ طیبہ سے مزین کالے اور سفید جھنڈے اٹھا لیے۔ خلافت کی واپسی کے تصور سے شدید خوفزدہ ہو کر روس امریکی معاونت سے جابر بشار کی فوجی مدد کر رہا ہے۔ یہ مدد اس صورتحال میں کی جا رہی ہے جبکہ الاسد حکومت نے گاوں اور قصبوں کو تباہ و برباد اور لاکھوں لوگوں کو قتل کر دیا اور اس قتل عام سے عورتوں، بچوں اور بوڑھوں تک کو بخشا نہیں گیا۔ اس حکومت کے بدمعاشوں نے لوگوں کو بدترین تشدد کا نشانہ بنایا، خواتین کی عصمت دری کی اور سڑک پر چلتے بچوں کو ان کی ماوں سے چھین کر اغوا کیا۔

        اگر پاکستان کی حکومت شام کے مسلمانوں سے مخلص ہوتی تو ایران کی سپریم نیشنل سیکیورٹی کونسل کے سیکریٹری کا استقبال نہ کرتی بلکہ اسے واپس بھیج دیتی اور شام میں ایرانی حکومت کی سیاہ کردار کی شدید مذمت کرتی۔ ایران شام کے مسلمانوں کے خلاف امریکی جنگ میں امریکہ کی معاونت کر رہا ہے۔ ایران یہ معاونت براہ راست شام میں اپنے فوجی بھیج کر کر رہا ہے اور بل واستہ طور پر لبنان میں موجود اپنے چیلے حزب اللہ کے ذریعے بھی کر رہا ہے۔ کس قدر شرم کی بات ہے کہ پاکستان کے غدار حکمران اُن لوگوں کا استقبال کر رہے ہیں جو خلافت کے قیام کی جدوجہد کرنے والوں سے لڑ رہے ہیں۔

        حزب التحریر افواج پاکستان کے افسران سے مطالبہ کرتی ہے کہ وہ اپنے فرض کو پورا کریں اور خلافت کے قیام کے لئے حزب التحریر کو نصرہ فراہم کریں۔ صرف خلافت کے قیام کی صورت میں ہی موجودہ حکمرانوں کی غداریوں کے سلسلے کا خاتمہ ممکن ہے جو ان لوگوں کی مدد و معاونت کرتے ہیں جو اسلام کے نفاذ کی جدوجہد کرنے والوں سے لڑتے ہیں۔

بَلْ نَقْذِفُ بِٱلْحَقِّ عَلَى ٱلْبَاطِلِ فَيَدْمَغُهُ

"ہم حق کو باطل پر دے مارتے ہیں، پس وہ اس کا بھیجا نکال دیتا ہے"

(الانبیاء:18)

ولایہ پاکستان میں حزب التحریر کا میڈیا آفس


Today 1094 visitors (3915 hits) Alhamdulillah
=> Do you also want a homepage for free? Then click here! <=