Media Office Hizb ut-Tahrir Pakistan

Indian Aggression on LOC

 

Friday, 11th Rabi ul Awwal 1436 AH                            02/01/2015 CE                                    No: PR15001

Press Release

Indian Aggression on LOC and International Border

India encouraged by weak, cowardly response of Raheel-Nawaz Regime

Four Pakistani soldiers have been killed by Indian forces in the last two days on the Line of Control and the International Border. Since last July several Pakistani civilians and soldiers including officers have been killed because of Indian aggression. Despite this, the Raheel-Nawaz regime is content with delivering empty statements of condemnation through the foreign office and statements to “silence Indian guns” through the I.S.P.R. This weak, rather coward, response from the Raheel-Nawaz regime has encouraged India to the extent that even after killing two Punjab Rangers soldiers deceitfully she still dares to threaten Pakistan with the use of double force.

Instead of initiating Jihad against India, the Raheel-Nawaz regime is busy implementing the ‘National Action Plan’, which is in reality a US Action Plan to eliminate the mujahideen fighting against US occupation in Afghanistan from the tribal regions and indeed the entire country. This regime is currently only interested in obeying US orders to eliminate those who oppose the US Raj in this region. The Raheel-Nawaz regime neither works to eliminate the extensive US intelligence network which is responsible for planning and overseeing the execution of bombings and killings of civilian and military personal in military cantonment or civilian areas, nor gives a befitting response to Indian aggression. On one hand, our jet fighters, tanks and artillery are bombing day and night in our own tribal territory and on the other hand not a single jet fighter, tank or artillery is available to avenge the killing of our soldiers and civilians and stop Indian aggression.

As per the American plan the Raheel-Nawaz regime is not responding Indian aggression in a befitting manner. America wants to weaken Pakistan and strengthen India so she could be used to counter China in this region. The purpose of the ‘National Action Plan’ (US Action Plan) is to weaken Pakistan and its armed forces by putting army and Jihadi forces up against one another.

Hizb ut-Tahrir asks the soldiers and officers of the armed forces: how can you keep quite against Indian aggression? The cowardice Indians would dare to attack you unless the traitors in the political and military leadership assured them that they will not let out the lions of Pakistan army. Have you forgotten Captain Karnal Sher Khan who fought the Indian army with such bravery and courage in Kargil that even after his martyrdom the Indian army were scared to lift his body? It is your Islamic duty that you turn your weapon towards the aggressing Mushrik Hindu and teach them a lesson that they will never dare to forget. RasulAllah saaw said:

جَاهِدُواالْمُشْرِكِينَ بِأَمْوَالِكُمْ وَأَنْفُسِكُمْ وَأَلْسِنَتِكُمْ

“Fight the mushrikeen with your wealth, yourselves and your tongues.”

(Abu Daud).

The traitors in political and military leadership will never allow our armed forces to dispense their Islamic duty. Therefore, the people of Pakistan and the sincere officers amongst its armed forces must work with Hizb ut-Tahrir in order to get rid of these traitors and establish the Khilafah. Then the Khalifah will mobilize the army against the enemies and will remind India of is true lowly status, and then will the the Ummah and its armed forces achieve honour by their deen.

Shahzad Shaikh

Deputy to the Spokesman of Hizb ut-Tahrir in the Wilayah of Pakistan

 


جمعہ، 11 ربیع الاول، 1436ھ                                  02/11/2015                              نمبرPR15001:

پریس ریلیز

لائن آف کنٹرول اور بین الاقوامی سرحد پر بھارتی جارحیت

راحیل-نواز حکومت کا بزدلانہ جواب بھارت کو مضبوط کررہا ہے

       پچھلےدو دنوں میں بھارت نے لائن آف کنٹرول اور بین لااقوامی سرحد پر چار پاکستانی فوجیوں کو شہید کردیا ہے۔ پچھلے سال جولائی سے شروع ہونے والی بھارتی جارحیت میں اب تک کئی پاکستانی فوجی اور شہری اپنی جانوں سے ہاتھ دھو چکے ہیں لیکن راحیل-نواز حکومت وزارت خارجہ کے ذریعے مزمتی اور آئی۔ایس۔پی۔آر کے ذریعے "بھارتی بندوقوں کو خاموش "کرنے کے بیانات دینے پر ہی اکتفا کررہی ہے۔ راحیل-نواز حکومت کے کمزور بلکہ بزدلانہ بیانات اور عمل نے بھارت کو یہ ہمت فراہم کی ہے کہ بدھ 31 دسمبر 2014 کو لاہور کے قریب بین الاقوامی سرحد پر پنجاب رینجرز کے دو جوانوں کو دھوکے سے شہید کرنے کے بعد پاکستان کو یہ دھمکی دے رہا ہے کہ اگر پاکستان نے اپنا رویہ درست نہ کیا تو دوگنی طاقت سے جواب دے گا۔

       راحیل-نوازحکومت بھارت کے خلاف جہاد کرنے کے بجائے نیشنل ایکشن پلان، جو درحقیقیت امریکی ایکشن پلان ہے، کے تحت قبائلی علاقوں سمیت ملک بھر میں موجود اُن مجاہدین کو ختم کرنے میں مصروف عمل ہے جو افغانستان میں امریکہ کے خلاف جہاد کررہے ہیں۔ اس حکومت کے پاس اس وقت صرف امریکی حکم پر اُس کے خلاف لڑنے والوں کو ختم کرنے کی ہی دہن سوار ہے۔ حکومت نہ تو اس امریکی نیٹ ورک کو ختم کرتی ہے جو ملک میں فوجی تنصیبات اور شہری علاقوں کو نشانہ بنانے کی منصوبہ بندی اور ان پر عمل کرواتا ہے اور نہ ہی بھارتی جارحیت کا منہ توڑ جواب دے رہی ہے۔ ایک طرف دن رات ہمارے ٹینک، توپیں اور طیارے اپنے ہی ملک میں بمباری کررہے ہیں لیکن بھارت کو سبق سیکھانے کے لئے ایک بھی ٹینک، توپ یا طیارہ جیسے دستیاب ہی نہیں ہے۔

       راحیل-نواز حکومت امریکی منصوبے کے تحت بھارت کی جارحیت کا منہ توڑ جواب نہیں دے رہی ہے۔ امریکہ خطے میں پاکستان کو کمزور اور بھارت کو مضبوط کرنا چاہتا ہے تا کہ بھارت کو چین کے خلاف استعمال کرسکے۔ نیشنل ایکشن پلان (امریکی ایکشن پلان) کا یہی مقصد ہے کہ پاکستان اورافواج پاکستان کو کمزور کرنے کے لئے فوج اور جہادی قوتوں کو ایک دوسرے کے خلاف صف آراء کردیا جائے۔

       حزب التحریر افواج پاکستان کے افسران اور جوانوں سے سوال کرتی ہے کہ آپ کس طرح بھارتی جارحیت پر خاموشی اختیار کرسکتے ہو؟ بزدل ہندوستان کبھی آپ پر حملے کی ہمت نہیں کرسکتا جب تک اس کو سیاسی و فوجی قیادت میں موجود غدار اس بات کا یقین نہ دلا دیں کہ ان کے خلاف افواج پاکستان کے شیروں کو حرکت میں نہیں لایا جائے گا۔ کیا آپ کیپٹن کرنل شیر خان کو بھول گئے ہیں کہ کارگل میں جس کی بہادری اور جواں مردی نے بھارتی فوج کو اس قدر خوفزدہ کردیا تھا کہ اس کی شہادت کے بعد بھی اس کی لاش کو اٹھانے سے ڈر رہے تھے؟ یہ آپ کی دینی اور ملی ذمہ داری ہے کہ آپ اپنے ہتھیاروں کا رخ ہندو مشرکین کی جانب کردیں اور انہیں ان کی اوقات یاد دلا دیں۔ رسول اللہ نےفرمایاہے،

جَاهِدُواالْمُشْرِكِينَ بِأَمْوَالِكُمْ وَأَنْفُسِكُمْ وَأَلْسِنَتِكُمْ

"مشرکین سے اپنے مال، جانوں اور زبان کے ذریعے لڑو"

(ابوداود)۔

       سیاسی وفوجی قیادت میں موجود غدار کبھی بھی ہماری افواج کو ان کے دینی فریضے کی ادائیگی کے لئے کام کرنے کی اجازت نہیں دیں گے، لہٰذا پاکستان کے مسلمانوں اور افواج میں موجود مخلص افسران پر لازم ہے کہ وہ سیاسی وفوجی قیادت میں موجود غداروں سے نجات حاصل کرنے اور خلافت کے قیام کے لئے حزب التحریر کے ساتھ کام کریں۔ پھر خلیفہ افواج کو دشمن کے خلاف حرکت میں لائے گا اور بھارت کو اس کی اوقات یاد لائے گا اور مسلمانوں اور ان کی افواج کو عزت حاصل ہوگی۔

شہزاد شیخ

ولایہ پاکستان میں حزب التحریر کے ڈپٹی ترجمان

 


Today 1575 visitors (5303 hits) Alhamdulillah
=> Do you also want a homepage for free? Then click here! <=