Media Office Hizb ut-Tahrir Pakistan

Hizb ut Tahrir Wilayah Pakistan Delivers Memorandum at Uzbek Embassy

 Saturday, 25th Muharram 1437                          07/11/2015 CE                           No: PN15082

Press Release

Hizb ut-Tahrir Wilayah Pakistan Delivers Memorandum at Uzbek Embassy

Uzbek Regime's Crimes will not go Unpunished in This World and the Punishment of the Hereafter is more Severe

Hizb ut-Tahrir Wilayah Pakistan delivered a memorandum issued by Hizb ut-Tahrir Uzbekistan to the embassy of Uzbekistan in Islamabad. This memorandum was issued on 28th October 2015, highlighting the atrocities committed by the brutal regime of the Karimov regime against the Shahab of Hizb ut-Tahrir imprisoned in Uzbek jails.

 The memorandum stated that “state-affiliated detainees have attempted to break the will of the steadfast members of Hizb ut-Tahrir and especially of Brother Kazhakofa Ahmad Jan from the city of Andijan, whom they broke his legs... and when his relatives came to visit him, the state-affiliated detainees asked him to divorce his wife. He refused it categorically, and after he confronted them with this firm response, they assisted the prison management of Prison OYA-64/51 on 5/10/2015 to stab Ahmad Jan in his stomach with a knife...”

It further stated that, “the internal system of the prison is controlled by the state-affiliated detainees and they carry out acts of brutality against the detainees for religious reasons according to Article 159, especially against the detainees from the members of Hizb ut-Tahrir. They put them in an isolated room where they are subjected to most severe types of torture and humiliation... and they break their hands and feet with utter brutality. They do not stop at this, they enter the visitor rooms where prisoners meet with their relatives, when they are allowed to visit, and they disturb and harm them... and all this is with the knowledge of the prison’s administration, who cover up for them.”

In this memorandum it is stated that, “We like to remind you that there are more than six thousand members of Hizb ut-Tahrir in Uzbekistan's prisons, many of them are detained since 1999, which is more than 16 years, and even though their extended time of their sentences is finished, the state in Uzbekistan extends their detention illegally for a second, third and fourth time. This is not exclusive to men, Muslim women face the same fate in Karimov's prisons.”

The memorandum ends with a warning to the Uzbek regime that, “we declare to the whole world that these crimes will not go unpunished in this world, Allah willing, and the punishment of the Hereafter is more severe and eternal... and that these crimes will not stop Hizb ut-Tahrir from moving forth in its call for the return of Islam to the realm of life, patiently, steadfast, and proud, and in full belief of the near victory of Allah (swt) and victory of His Deen, Allah (swt) says in His Great Book:

يُرِيدُونَ أَنْ يُطْفِئُوا نُورَ اللَّهِ بِأَفْوَاهِهِمْ وَيَأْبَى اللَّهُ إِلَّا أَنْ يُتِمَّ نُورَهُ وَلَوْ كَرِهَ الْكَافِرُونَ

“They want to extinguish the light of Allah with their mouths, but Allah refuses except to perfect His light, although the disbelievers dislike it”

[AtTawba: 32]

Media Office of Hizb ut-Tahrir in the Wilayah of Pakistan

ہفتہ، 25 محرم، 1437ھ                                 07/11/2015                                نمبرPN15082 :

حزب التحریر ولایہ پاکستان نے ایک دستاویز پاکستان میں موجود ازبک سفارت خانے کے حوالے کی

ازبک حکومت کے جرائم پراسے دنیا میں بھی سزا ملے گی اور آخرت کا عذاب تو زیادہ شدید اور ہمیشہ کے لئے ہوگا

        حزب التحریر ولایہ پاکستان نے اسلام آباد میں موجود ازبک سفارت خانے کو ایک دستاویز حوالے کی۔ یہ دستاویز 28 اکتوبر 2015 کو حزب التحریر ازبکستان کی جانب سے جاری ہوئی تھی جس میں ازبکستان کی جیلوں میں قید حزب التحریر کے شباب کے خلاف وحشی کریموف حکومت کے جرائم کو بیان کیا گیا ہے۔

        اس دستاویز میں یہ بیان کیا گیا ہے کہ "جب سے ان حکومتی لوگوں کو جیل لایا گیا ہے یہ حزب التحریر کے ان اراکین کے ارادوں کو توڑنے کی کوشش کر رہے ہیں جو ثابت قدم ہیں خاص کر حزب کے رکن کازاکوفا احمد جان جو کہ اندیجان شہر سے تعلق رکھتے ہیں جن کی ٹانگوں کو توڑ دیا گیا ۔۔۔ پھر جب ان کے رشتہ دار ان سے ملنے آئے تو ان حکومتی قیدیوں نےان سے اپنی بیوی کو طلاق دینے کا مطالبہ کیا، اس نے سختی سے انکار کر دیا، اس پر ان لوگوں نے جیل انتظامیہ کی مدد سے اویا قید خانے 51/64 میں 5 اکتوبر 2015 کو احمد جان کے پیٹ پر چھری سے وار کیا۔۔۔"

        اس دستاویز میں مزید یہ کہا گیا کہ "جیل کے اندرونی نظام پر ان سرکاری قیدیوں کا کنٹرول ہے، یہ شق 159 کے تحت دین کی بنیاد پر سزا پانے والے لوگوں کے ساتھ وحشانہ سلوک کرتے ہیں، خصوصاً حزب التحریر کے اراکین کے ساتھ، جن کو تنگ و تاریک تنہائی کے کوٹھڑیوں میں رکھا جاتا ہے اور ان کو ہر قسم کے تشدد اور توہین کا نشانہ بنا یا جاتا ہے، اور انتہائی وحشیانہ طریقے سےان کے ہاتھ پاوں توڑ دیئے جاتے ہیں۔ یہ اسی پر اکتفا نہیں کرتے بلکہ جب قیدیوں کے رشتہ داروں کو ان سے ملاقات کی اجازت ملتی ہے تو یہ اس وقت ان کے کمروں میں جا کر ان کو تنگ کرتے ہیں اور اذیت دیتے ہیں ۔۔۔ یہ سب کچھ جیل انتظامیہ کی آنکھوں کے سامنے ہو رہا ہے مگر وہ اس پر پردہ ڈالتے ہیں"۔

        اس دستاویز میں یہ بھی کہا گیا ہے کہ "ہم پوری دنیا کے سامنے یہ اعلان کر رہے ہیں کہ انشاء اللہ ان جرائم پر دنیا میں بھی سزا ملے گی اور آخرت کا عذاب تو رسوا کرنے والا ہے ۔۔۔ اسی طرح یہ جرائم حزب التحریر کو اسلام کو دوبارہ کارزار حیات میں واپس لانے کے لیے صبر اور ثابت قدمی سے دعوت دینے اور سر اٹھا کر چلنے سے نہیں روک سکتے، ہمیں اللہ کی مدد کے قریب ہونے اور اللہ کے دین کے سربلند ہونے کا یقین ہے، اللہ اپنی کتاب عظیم الشان میں فرماتا ہے:

﴿يُرِيدُونَ أَنْ يُطْفِئُوا نُورَ اللَّهِ بِأَفْوَاهِهِمْ وَيَأْبَى اللَّهُ إِلَّا أَنْ يُتِمَّ نُورَهُ وَلَوْ كَرِهَ الْكَافِرُونَ

"یہ اپنے منہ سے اسلام کے نور کو بھجانا چاہتے ہیں اور اللہ اس کو مسترد کر کے اپنے نور کو مکمل کرنے پر اصرار کر رہا ہے چاہے یہ کافروں کو ناپسند ہو"

(التوبۃ:32)۔

ولایہ پاکستان میں حزب التحریر کا میڈیا آفس


Today 168 visitors (897 hits) Alhamdulillah
=> Do you also want a homepage for free? Then click here! <=