Media Office Hizb ut-Tahrir Pakistan

PR 29 09 2013

Sunday, 22 Dhu al-Qi'dah 1434 AH               29/09/2013 CE               No: PR13098

Press Release

End All American Presence From The Region

Kayani-Sharif Regime Carries Carrot & Stick To Grant America Nine Bases On The Doorstep Of The World’s Only Muslim Nuclear Power

Rather than personally leading relief efforts after powerful earthquakes killed hundreds and left hundreds of thousands homeless in Baluchistan, Pakistan’s PM, Nawaz Sharif, busied himself in digging a deep grave for Pakistan’s security. On Friday 27th September 2013, Prime Minister Nawaz Sharif spoke from the ‘minbar’ of the Western colonialist tool, the United Nations, and announced the desire of the Kayani-Sharif regime to hold talks with the tribal Muslims that have been fighting the American occupation in Afghanistan for twelve years. At the same time, as offering the “carrot” of talks, the Kayani-Sharif regime carries the “stick” of military operations for those who can sense the danger in the sudden desire to “talk.”

The reality is that whether American instructs the Kayani-Sharif regime to use the “carrot” or the “stick,” the purpose is the same. America is joining its nights with its days to secure nine bases in Afghanistan, after its limited withdrawal, bases which are to be staffed by over 100,000 foreign personnel. Although the American stooge, Hamid Karzai, has assured America these nine bases, America needs a settlement to make her ill-gotten gains “halaal.”

Hizb ut-Tahrir in the Wilayah of Pakistan calls upon the Muslims of the tribal regions and beyond to raise their voices against these bases and denounce the use of both talks and operations to achieve them. Why must we incur the sin of undermining Pakistan’s security by working for such a large hostile crusader presence? Allah SWT forbade the Muslims to co-operate in matters of sin and hostility,

وَتَعَاوَنُوا عَلَى الْبِرِّ وَالتَّقْوَى وَلاَ تَعَاوَنُوا عَلَى الإِثْمِ وَالْعُدْوَانِ وَاتَّقُوا اللَّهَ إِنَّ اللَّهَ شَدِيدُ الْعِقَابِ

“And co-operate in Goodness and Taqwa and do not co-operate in Sin and Hostility and fear Allah for Allah is indeed swift in punishment.”

[Surah Al-Maidah 5:2]

As for the Goodness and the Taqwa, it will only be achieved by a righteous Khaleefah, who will lead the armed forces and the mujahideen as one force against the enemy forces. Only then will the strength of the Muslims be used to eradicate all the destabilizing American presence from the region, whether bases or consulates, military or private military. Thus Hizb ut-Tahrir Wilayah of Pakistan calls upon the armed forces to grant the Nussrah to Hizb ut-Tahrir, led by the eminent scholar and statesman, Shaikh Ata Ibn Khalil Abu-Ar-Rashta, for the immediate return of the Khilafah to the pure lands of Pakistan.

The Media Office of Hizb ut-Tahrir

In Wilayah of Pakistan

اتوار، 22 ذیقعد،، 1434ھ                                29/09/2013                              نمبرPR13098:

خطے سے ہر طرح کی امریکی موجودگی کا خاتمہ کرو

دنیا کی واحد مسلم ایٹمی قوت کی دہلیز پر کیانی و شریف حکومت گاجر و  لاٹھی کی پالیسی کی ذریعے امریکہ کو اڈے فراہم کرنے کی کوشش کر رہی ہے

وزیر اعظم نواز شریف بلوچستان کے تباہ کن زلزے کے نتیجے میں ہلاک ،زخمی اور بے گھر ہونے والوں کی بحالی کی مہم کی سربراہی کرنے کی بجائے پاکستان کے تحفظ کے خاتمے کے لیے سر توڑ کوشش کررہے ہیں۔ جمعہ 27ستمبر2013کو نواز شریف نےمغربی  استعماری طاقتوں کی لونڈی اقوام متحدہ کے پلیٹ فارم سے خطاب کیا اور کیانی و شریف حکومت کی اس خواہش کا اظہار کیا کہ وہ قبائلی مسلمانوں سے مذاکرات کریں گے جو پچھلے بارہ سالوں سے افغانستان میں قابض امریکی افواج  کے خلاف لڑ رہے ہیں۔ کیانی و شریف حکومت جہاں کی صورت میں  "گاجر" کی پیشکش کررہی ہے وہیں ان لوگوں کےخلاف فوجی آپریشن کی "لاٹھی" بھی پکڑے ہوئے ہے جو مذاکرات کی اس اچانک شدید خواہش میں خطر ے کو  بھانپ رہے ہیں۔

حقیقت یہ ہے کہ یہ امریکہ ہی ہے جو کیانی و شریف حکومت کو کبھی "گاجر" تو کبھی "لاٹھی " اٹھانے کا  حکم جاری کرتا ہے اور دونوں باتوں کا ایک ہی مقصد ہوتا ہے۔ امریکہ محدود انخلاء کے بعد افغانستان میں اڈوں کو حاصل کرنے کے لیے دن  رات ایک کررہا ہے  جہاں ایک لاکھ سے زیادہ غیر ملکی لوگوں کو رکھا جائے گا۔  اگرچہ امریکی ایجنٹ حامد کرزئی نے امریکہ کو ان نوں(9) اڈوں کی فراہمی کی یقین دہانی کرادی ہے لیکن امریکہ ایک ایسے معاہدے کی شدید خواہش رکھتا ہے جس کے ذریعے وہ اپنے غیر قانونی فوائد کو "حلال" قرار دلواسکے ۔

حزب التحریر  ولایہ پاکستان قبائلی علاقوں اور دیگر علاقوں کے مسلمانوں سے یہ کہتی ہے کہ وہ ان اڈوں کی فراہمی کے خلاف آواز بلند کریں اور  اس مقصد کے حصول کے لیے ہونے والے مذاکرات اور فوجی آپریشنز کو مسترد کردیں۔ ہم کیوں اس گناہ کے بوجھ کو اپنے سر لیں جس کے ذریعے ایک بڑی صلیبی قوت کو پاکستان کی دہلیز پر بٹھا کر پاکستان کی سیکیورٹی نظر انداز کردیا جائے؟ اللہ سبحانہ و تعالی نے مسلمانوں کو اس بات کی اجازت نہیں دی کہ وہ گناہ  اور ظلم کے معاملات  میں تعاون کریں ۔ اللہ سبحانہ و تعالی فرماتے ہیں :

وَتَعَاوَنُوا عَلَى الْبِرِّ وَالتَّقْوَى وَلاَ تَعَاوَنُوا عَلَى الإِثْمِ وَالْعُدْوَانِ وَاتَّقُوا اللَّهَ إِنَّ اللَّهَ شَدِيدُ الْعِقَابِ

"اور اچھی باتوں اور تقوی کے معاملات میں تعاون کرو اور گناہ اور ظلم میں تعاون مت کرو اور اللہ سے ڈرو کیونکہ بے شک اللہ سزا دینے میں دیر نہیں کرتے" (المائدہ:2)۔

جہاں تک خیر اور تقوی کی بات ہے تو یہ صرف خلافت راشدہ ہی کے ذریعے حاصل ہوسکتا ہے جو دشمن کی افواج کے خلاف مسلم افواج اور مجاہدین کی قیادت ، ایک یکجا قوت کی صورت میں  کرے گی۔ صرف اُسی وقت مسلمانوں کی طاقت خطے  میں موجود امریکی موجودگی کے خاتمے کا باعث بنے گی چاہے وہ اڈوں اور قونصل خانوں کی شکل میں ہو یا امریکی افواج اور اُن کی نجی افواج کی شکل میں ہو۔ لہذا حزب التحریر ولایہ پاکستان افواج پاکستان سے پاکستان میں خلافت کے فوری قیام کے لیے حزب التحریر کو نصرۃ کی فراہمی کا مطالبہ کرتی ہے جس کی قیادت  مشہور فقیہ اور رہنما شیخ عطا بن خلیل ابو الرَشتہ کررہے ہیں۔

ولایہ پاکستان میں حزب التحریر کا میڈیا آفس

Today 2327 visitors (7779 hits) Alhamdulillah
=> Do you also want a homepage for free? Then click here! <=