Media Office Hizb ut-Tahrir Pakistan

PR 02 02 2013

Saturday, 21st Rabi ul Awwal 1434H                              02/02/2013                                N0: PR13013

The Kargil Issue

Yet Another Proof That America Uses Traitors In Pakistan Military Leadership To Serve Its Interests In The Region

The Kargil incidence is yet another proof that the traitor in the military leadership at the time, Pervaiz Musharraf, foremost agent of America, who opened Pakistan to unprecedented American presence, slaughtered Muslims in the Lal Masjid operation, was a loyal American servant even before coming to power as chief executive.

The Kargil operation by Musharraf was not to liberate Kashmir, which has been the ardent desire of our people and armed forces for decades. Instead, this incidence, which occurred only a few months before the elections in India, was to build profile of the then Indian Prime Minister Vajpayee, a fellow American agent, and helped his party, the BJP, to win the elections. BJP traditionally uses anti-Pakistan and anti-Muslim feelings to grab votes and the Kargil incidence fanned these emotions strongly.

Such is the reality of traitors in the political and military leadership of Pakistan! They do not hesitate to sacrifice the pure blood of soldiers of our army for the sake of America. Moreover, Hizb ut-Tahrir remind all those engaged in this debate that Musharraf made treachery in the past but Kayani is making treachery now.

The sincere officers in Pakistan armed forces should move to pluck out these few black sheep from our noble institution and provide Nusrrah to Hizb ut-Tahrir for the establishment of Khilafah. In the Khilafah the pure blood of soldiers of this Ummah will not be spilled for the sake of American interests, rather their role would be that of Salahudddin Ayubi - the liberation of all the occupied lands from colonialist kuffar.

Media Office of Hizb ut-Tahrir in Pakistan

ہفتہ 21 ربیع الاول، 1434ھ                                            02/02/2013                                نمبر:PR13013

سانحہ کارگل اس بات کا ثبوت ہے کہ امریکہ فوجی قیادت میں موجود غداروں کو خطے میں اپنے مفادات کی تکمیل کے لیے استعمال کرتا ہے

سانحہ کارگل اس بات کا ثبوت ہے کہ فوجی قیادت میں موجود غدار پرویز مشرف، پاکستان کی تاریخ کا سب سے بڑا امریکی ایجنٹ ہے جس نے پاکستان کو مکمل طور پر امریکی جھولی میں ڈال دیا، جس نے سینکڑوں مسلمانوں کو لال مسجد آپریشن میں قتل کیا اور جو اقتدار میں آنے سے قبل ہی امریکہ کا غلام تھا۔

مشرف نے کارگل آپریشن کشمیر کی آزادی کے لیے شروع نہیں کیا تھا جو یقیناً کئی دہائیوں سے پاکستان کی عوام اور اس کی افواج کی شدید خواہش ہے۔ بلکہ یہ آپریشن بھارت میں ہونے والے انتخابات سے صرف چند ماہ قبل کیا گیا تاکہ بھارتی وزیر اعظم واجپائی، ایک امریکی ایجنٹ، اور ان کی جماعت بھارتیہ جنتا پارٹی کو انتخابات میں کامیابی کے لیے شہرت حاصل ہوسکے۔ بھارتی جنتا پارٹی، جو روایتی طور پر پاکستان اور مسلم مخالف جذبات کو ووٹ حاصل کرنے کے لیے استعمال کرتی ہے، کے لیے کارگل آپریشن ان جذبات کو مزید بھڑکانے کے لیے ایک نادر تحفہ تھا۔

یہ ہے پاکستان کی سیاسی اور فوجی قیادت میں موجود غداروں کی حقیقت! یہ غدار امریکہ کی خوشنودی کے لیے اپنے ہی فوجی افسران اور سپاہیوں کے مقدس خون کو بے دریغ طریقے سے بہانے سے بھی گریز نہیں کرتے۔ حزب التحریر ان تمام لوگوں کو اس بات کی یاد دہانی کرانا چاہتی ہے جو کارگل کے موضوع پر بحث کر رہے ہیں کہ ماضی میں مشرف نے یہ کردار ادا کیا تھا اور اب کیانی یہ کردار ادا کر رہا ہے۔

افواج پاکستان میں موجود مخلص افسران پر لازم ہے کہ وہ فوج کے زبردست ادارے میں موجود چند کالی بھیڑوں کو نکال باہر کریں اور خلافت کے قیام کے لیے حزب التحریر کو نصرة فراہم کریں۔ خلافت امت کے سپاہیوں کے مقدس خون کو امریکی مفادات کے لیے قربان نہیں کرے گی بلکہ ان کا کردار صلاح الدین ایوبی جیسا ہوگا کہ وہ تمام مسلم مقبوضہ علاقوں کو کفار کے چنگل سے آزادی دلوائیں۔

میڈیا آفس حزب التحریر ولایہ پاکستان


Today 323 visitors (1865 hits) Alhamdulillah
=> Do you also want a homepage for free? Then click here! <=