Media Office Hizb ut-Tahrir Pakistan

PR 02 05 2013




Thursday
, 22st  Jamadi-ul- Thaani 1434            
2/05/2013 CE                N0: PR13048
  
Press Release
The Ameer’s Speech released
Pakistan’s armed forces must be lead by a righteous Khaleefah, rather than a tout for America
On 1 May 2013, on the very same day that Hizb ut-Tahrir Wilayah Pakistan began a huge country wide distribution of the Urdu translation of the speech of the Ameer of Hizb ut-Tahrir, eminent statesman and jurist, Shaikh Ata bin Khaleel Abu Rashta to the people of Pakistan, the Pure, the Good, the people of Pakistan were subjected to wide spread media reports publicizing the latest rants from America’s key agent in Pakistan, General Kayani, in support of America’s Raj.
Hizb ut-Tahrir asks, who deserves to lead Pakistan’s armed forces, Kayani or Shaikh Ata?
On the one hand, General Kayani insisted on calling America’s crusade to install a permanent American presence, under cover of a limited withdrawal, on the doorstep of the sole Muslim nuclear power, as “Pakistan’s war”! Whilst on the other hand Shaikh Ata proclaimed, “As for Kayani and his gang, they are even worse than Zardari in mischief and evil, and in oppression and corruption. Kayani's role in surrendering the country to America is the greatest, as is his role in allowing the American drones to bomb the Muslims most severely and dangerously. So is his role in moving the main front of the army from the border with the kafir Hindus to the tribal areas, Balochistan and resistance in Afghanistan, as well as his role in other humiliation and shame, such as his role in securing the abduction of the shebaab of Hizb ut-Tahrir and their torture, for such a role is of even greater abomination before Allah SWT and the servants of Allah. And such also is his role in the supplying of America and its allies in Afghanistan with military logistics, medicine, food and water, for this is the role of the traitor who exceeds all other traitors ... not to mention his role in collusion with the spies of America in conspiracies and bombings in Karachi and elsewhere. His role is the greatest, for he has sufficient military force to stop all these tragedies and calamities, if he cared to, and prevent these explosions, bombs and drones ... But he forgot about his Deen and he forgot his oath when he was drafted into the army, to protect the country from all aggression and not to surrender it to the spies of America!”
So, should our armed forces remain still before Kayani’s treachery, or should they mobilize immediately to give the Nussrah to Hizb ut-Tahrir so that its Ameer can become the Khaleefah of the Muslims, under whom the Muslims are protected and from behind whom the Muslims fight against the enemy?
And on the one hand, General Kayani called for the entire armed forces to back him in more flogging of the dead horse of democracy, a democracy that is described as “America’s horse in Pakistan” by America’s very own ambassador to Islamabad. Whilst on the other hand Shaikh Ata proclaimed, “To the Election Commission, you are Muslim, and so you realize that the legislation is for Allah SWT alone, so how do you allow yourselves to hold elections that will produce an assembly to legislate instead of Allah SWT? How can you hold elections for ordering and forbidding by other than Allah? How can you hold elections knowing that Zardari, Kayani and their cohorts and factions, hold the reins from behind a curtain? How can you hold elections for an assembly that makes laws to serve the interests of the political and military leadership, and as a natural consequence the interests of America, which is at the very top of their interests?....” And the honored Shaikh Ata further stated, “O Election Commission: It is not the need of the hour to hold elections that produce an assembly that legislates instead of Allah SWT and decide laws that are not revealed by Allah SWT from authority ... the need of the hour is the establishment of the Khilafah and a Bayah to a just and rightly guided Khaleefah who rules by Shariah and nothing else ... the need is for Pakistan to be the nucleus of the Khilafah state, if not the important part of the Khilafah State ... the need is for Pakistan to increase in its power through the Deen, so that its army and nuclear weapons can be a power for truth and justice ... the need is for the liberation of Kashmir, for Kashmir is a land of Islam which is occupied by the mushrikeen ... and the need is for the re-annexation with East Pakistan, "Bangladesh," not by sea or air, but by land, through the Muslim lands ... and instead of the army confronting Muslims in Pakistan and Afghanistan, the weapons of these two armies will be directed in the right direction, facing America and its allies, causing them to retreat from their evil and destructive schemes ... and thus according to the promise of Allah SWT and the glad tidings of RasulAllah SAW, Pakistan shall be the nucleus of the Khilafah or part of the Khilafah state, which will light up the earth with the guidance of the new Khilafah, by which the lands shall reveal their treasures, the skies will send their blessings and Allah SWT shall heal the breasts of a believing people..."
The audio file of the Ameer’s speech in the original Arabic, the language of Islam, the people of Jannah and the official language of the coming Khilafah state, and the text of his speech in Arabic, Urdu and English language is available on the following link:
http://pk.tl/1byO
 
Media office of Hizb ut-Tahrir in Pakistan 


 
جمعرات،22جمادی الثانی ،  1434 ھ                          2/05/2013                                      نمبر   PR13048  :
امیر حزب کا پاکستان کے عوام کے نام پیغام جاری کردیا گیا
پاکستان کی افواج کی قیادت ایک صالح خلیفہ کو کرنی چاہیے نہ کہ امریکی ٹاوٹ کو
یکم مئی 2013کو پاکستان کے عوام کو امریکی جنگ کی حمائت اور پاکستان پرامریکی راج کو قبول کرنے کے لیے میڈیا کے ذریعے پاکستان میں اہم ترین امریکی ایجنٹ جنرل کیانی کا پاکستان میں امریکی راج کی حمائت میں ایک بیان جاری کیا گیا۔ اور اسی دن حزب التحریرولایہ پاکستان نے ملک بھر میں امیر حزب التحریر، مشہور و معروف رہنما اور فقہی، شیخ عطا بن خلیل ابو رشتہ کا پاکستان کے عوام کے نام پیغام کا اردو ترجمہ تقسیم کیاگیا۔
 حزب التحریریہ سوال کرتی ہے کہ افواج پاکستان کی قیادت کرنے کا حق دار کیانی ہے یا شیخ عطا؟
 ایک طرف جنرل کیانی نے امریکی صلیبی جنگ کو جاری رکھنے اور دنیا کی واحد مسلم ریاست کی سرحدوں پر محدود امریکی انخلأ کے نام پر امریکی افواج کی موجودگی کو برقرار رکھنے کو ''پاکستان کی جنگ'' قرار دیا۔ جبکہ دوسری جانب شیخ عطا نے اعلان کیا کہ '' جہاں تک کیانی اور اس کے ٹولے کی بات ہے تووہ زرداری سے بھی زیادہ شرانگیز ہے۔  وہ ظلم اور فجور میں حد سے آگے بڑھ چکا ہے۔  ملک کو امریکہ کی سازشوں کا اکھاڑا بنانے میں اس کا کردار سب سے بڑا ہے۔  امریکی ڈرون طیاروںکی مسلمانوں پر بمباری میں اس کا کرداربنیادی اورگھنائونا ہے۔  فوج کو بھی ہندو مشرک ریاست کے بارڈر سے ہٹا کر قبائلی علاقوں ،بلوچستان اور افغانستان میں استعمار کے خلاف کھڑے مسلمانوں کے قتل پر لگانے میں اس کاہی کردار ہے۔  اس کا یہ کردار انتہائی رسواکن اور شرمناک ہے۔  اسی طرح حزب التحریر کے شباب کو اغوا کرنے اورانہیں لاپتہ کرنے میں اس کا کردار اللہ ،اس کے رسول ااور مومنوں کے نزدیک قبیح اورمجرمانہ ہے۔  افغانستا ن میں لڑنے والی امریکی فوج اور اس کے اتحادیوں کے لیے اسلحہ،خوراک اور ادویات کو سپلائی کر کے یہ خیانت اور غداری میں باقی تمام غداروں سے آگے نکل گیا ہے۔  اسی طرح امریکی جاسوسوں کے ساتھ گٹھ جوڑ کر کے کراچی میں دھماکے کر وانے اور یوں فتنے کی آگ کو بھڑکانے میں بھی خیانت کے اس پتلے کا کردار سب سے بڑھ کر ہے۔  یہ خائن اگر ان مظالم ، دھما کوں اور ڈرون حملوں کو روکنا چاہے تو اس کے پاس عسکری قوت کی کمی نہیں،لیکن یہ اپنے دین کوچھوڑ چکا ہے اوراُس قَسم کو بھلا چکا ہے جو اس نے فوج میں شمولیت کے وقت ہر دشمن کے خلاف اپنے ملک کی حفاظت کے لیے اٹھائی تھی۔  یہ قَسم اس نے اس ملک کو امریکی جاسوسوں کے حوالے کرنے کے لیے تونہیں اٹھائی تھی!''
تو کیا ہماری افواج کو کیانی کی غداری کے باوجود اس کی اطاعت جاری رکھنی چاہیے یا انھیں فوراً  حزب التحریرکو نصرة فراہم کر نی چاہیے تا کہ اس کے امیر مسلمانوں کے خلیفہ بن جائیں جن کی زیر قیادت مسلمانوں کو تحفظ فراہم کیا جائے اور مسلمانوں کے دشمنوں سے جنگ کی جائے؟
ایک طرف جنرل کیانی پوری افواج پاکستان سے اپنے لیے حمائت طلب کرتا ہے تا کہ جمہوریت کے مردہ گھوڑے کو زندہ کیا جاسکے ،اس جمہوریت کو جسے اسلام آباد میں مقیم امریکی سفارت کار ''پاکستان میں امریکی گھوڑا ''قرار دیتا ہے اور دوسری جانب شیخ عطا یہ اعلان کرتے ہیں کہ ''  الیکشن کمیشن سے ہم کہتے ہیں کہ تم مسلمان ہو اورتمہیں اس بات کا علم ہے کہ قانون سازی صرف اللہ سبحانہ وتعالی کا حق ہے۔  پھر تم کس طرح ایک ایسی پارلیمنٹ کووجود میں لانے کے لیے انتخابات کرواسکتے ہو جو اللہ کے قوانین کو پسِ پشت ڈال کر خودقانون سازی کرے؟  تم ایسے انتخابات کیسے کرا سکتے ہو کہ جس کا نتیجہ یہ ہو گا کہ پارلیمنٹ میں اللہ کے حرام کو حلال اور حلال کو حرام کیا جائے گا؟  تم انتخابات کی نگرانی کیسے کر رہے ہو کہ جب تمہیں معلوم ہے زرداری وکیا نی کا ٹولہ اوراس کے کارندے ہی پسِ پردہ ان انتخابات کو کنٹرول کر رہے ہیں؟  تم کس طرح ایسے انتخابات کا انعقاد کر سکتے ہو کہ جس کے نتیجے میں ایک ایسی پارلیمنٹ وجود میں آئے گی جو ان خود ساختہ قوانین کی توثیق کرے گی جن سے سیاسی اور عسکری قیات کے مفادات ہی پورے ہو ں گے یعنی دوسرے الفاظ میں صرف امریکہ ہی کے مفادات پورے ہوںگے؟ '' اور معزز شیخ عطا نے مزید کہا کہ ''آج پاکستان کو ایسے انتخابات کی ضرورت نہیں کہ جن سے ایک ایسی پارلیمنٹ جنم لے جو اللہ کی جگہ خودقانون سازی کرے،اورایسے قوانین کی توثیق کرے کہ جن کے بارے اللہ کی طرف سے کوئی برھان نازل نہیں ہوئی۔  بلکہ آج اُس خلافتِ راشدہ کو قائم کرنے اور ایسے عادل خلیفۂ راشد کی بیعت کی ضرورت ہے جو کسی اور چیز کو نہیں بلکہ صرف اللہ کی شریعت کو نافذ کرے۔  ضرورت اس امر کی ہے کہ پاکستان میں ریاستِ خلافت کی داغ بیل ڈالی جائے اور پاکستان خلافت کا نقطہ آغاز بنے یا پھرریاستِ خلافت کا اہم حصہ بنے۔  ضرورت اس امر کی ہے کہ پاکستان اپنے دین،اپنی فوج اور اپنی ایٹمی قوت کے زور پر ایسی قوت بن جائے جو حق کو قائم کرے اور عدل کو عام کرے،کشمیر اور اُن اسلامی زمینوں کو آزاد کرائے جن پر مشرکوں نے قبضہ کر رکھا ہے۔  اورہمارے جسم سے کاٹے گئے پاکستان کے ٹکڑے ''بنگلہ دیش'' کو کسی سمندری یا فضائی راستے کے ذریعے نہیں بلکہ زمینی رستے سے دوبار اپنے جسم سے جوڑدے،یعنی ہند کے راستے جو صدیوں سے اسلامی سرزمین ہے اور جس دوباراحاصل کرنامسلمانوں پر فرض ہے۔  اورخلافت تلے ہماری فوج پاکستان اور افغانستان میں مسلمانوں کا سامنا کرنے کی بجائے دونوں ممالک کو یکجا کرکے صحیح سمت اختیار کرے اور امریکہ اور اس کے اتحادیوں کا پیچھا کرے۔  پھر یہ استعماری کافر ممالک ذلیل وخوار ہو کر اپنے بلوں میں گھس جائیں گے۔  یوںاللہ سبحانہ وتعالی کا وعدہ اور رسول اللہ ا کی بشارت پوری ہوگی اور پاکستا ن خلافت کا مرکز یا خلافت کا جزو بنے گااور نئی خلافت کے نور سے دنیا کو جگمگا دے گا،زمین اپنے خزانے اُگل دے گی،آسمان اپنی بر کات نازل کرے گا،اوراللہ مومنوں کے دِلوں کوٹھنڈا کرے گا''۔
امیرحزب کی تقریر کو عربی زبان میں،جو کہ اسلام اورجنت کے لوگوں کی زبان ہے اور آنے والی خلافت کی سرکاری زبان بھی ہو گی، اور اس کا متن عربی،اردو اور انگریزی زبان میں مندرجہ ذیل لنک پر سنا اور پڑھا جاسکتا ہے۔
http://pk.tl/1byO
 
پاکستان میں حزب التحریر کاا میڈیا آفس
          
 


Today 2091 visitors (7222 hits) Alhamdulillah
=> Do you also want a homepage for free? Then click here! <=