Media Office Hizb ut-Tahrir Pakistan

PN 20 05 2013

Monday, 11th Rajab 1434 AH                            20/05/2013                                N0: PN13054

Hizb ut-Tahrir releases Industrial policy for the Khilafah

Making Khilafah the World’s leading Industrialized State

Hizb ut-Tahrir Wilayah Pakistan has issued a Publicized Policy Position (PPP) regarding the subject of establishing the industrial requirements for the Khilafah as the world’s leading state. Although Pakistan has huge material resources, a young, bright and lively population and has been included within the "next eleven" economies in the world regarding its potential, its industry is in a pitiful state, since its creation. Successive rulers whether they are democrats or dictators facilitated foreign companies in establishing  an industry in Pakistan, such as extraction plants, refineries and power generation allowing them to take their huge profits abroad, whilst these rulers obstructed local private companies through policies which favored foreign multinationals and suppressed local industry. So, it is not surprising today that thousands of industrial units have been declared sick and overall local industrial production is at an all-time low, with foreign multinational companies strengthening their hold on our economy.

Democracy will never allow Pakistan to achieve its potential because it is democracy which implements Western colonialist policies through laws which strengthen Western economic domination over our lands.

It is only Khilafah which will develop a powerful and diverse industry driven by the objective of being the world’s leading state, with the war industry as the leading edge of industrial development. In Khilafah the public ownership of industry related to public resources and state and private ownership of essential industries ensure the circulation of wealth in society, whilst maintaining optimal innovation, diversity and creativity. By establishing a strong industrial research and development base the Khilafah state with the help of the private sector would be a leading force in technological advancement which will further complement industrial growth. The Khilafah will end colonialist loans with their destructive conditions, by replacing them with Shariah based revenue generation, including public ownership of the immense wealth of the Ummah such as oil and gas thus creating a sound financial base for industrial expansion.

Note: To see the complete policy and relevant articles of the constitution for the Khilafah state, please go to this web link:

http://htmediapak.page.tl/policy-matters.htm

Media Office of Hizb ut-Tahrir in Pakistan

پیر، 11 رجب، 1434ھ                                                      20/05/2013                                نمبر:PN13054

حزب التحریر نے خلافت کی صنعتی پالیسی کا اعلان کر دیا

خلافت کو دنیا کی صف اول کی صنعتی طاقت بنایا جائے گا

حزب التحریر ولایہ پاکستان نے ریاست خلافت کو دنیا کی صف اول کی ریاست بننے کے لیے درکار صنعتی پالیسی کے حوالے سے مندرجہ ذیل پالیسی دستاویز "Publicized Policy Position" جاری کی ہے۔ اگرچہ پاکستان کے پاس وسیع معدنی ذخائر اور نوجوان اور محنتی لوگ موجود ہیں اور اپنی استعداد کی بنا پر اس کا شمار "آنے والی گیارہ معیشتوں" میں کیا جاتا ہے، اس کے باوجود آزادی سے لے کر آج تک اس کے صنعتی شعبے کی حالت انتہائی کمزور رہی ہے۔ ایک کے بعد ہر آنے والے دوسری حکومت نے غیر ملکی کمپنیوں کو پاکستان میں تیل و گیس کی پیداوار، ریفائینریز اور بجلی کے کارخانوں کے قیام میں ہر طرح کی مدد فراہم کی اور ان سے حاصل ہونے والے عظیم منافوں کو بیرون ملک لے جانے کی اجازت دی لیکن دوسری جانب نجی کمپنیوں کی راہ میں روکاوٹیں ایسی پالیسیاں بنا کر ڈالی گئی جس کے تحت غیر ملکی ملٹی نیشنل کمپنیوں کو تو مراعت فراہم کی گئی لیکن مقامی کمپنیوں کے لیے مشکلات پیدا کی گئی۔ لہذا آج یہ کوئی حیران کن امر نہیں ہے کہ ہزاروں کی تعداد میں کارخانوں کو بیما ر قرار دے دیا گیا ہوا ہے اور بحیثیت مجموعی مقامی صنعتوں کی پیداوار تاریخ کی کم ترین سطح پر ہے جبکہ غیر ملکی کمپنیاں ہماری معیشت پر اپنا قبضہ مضبوط کر رہی ہیں۔

جمہوریت کبھی پاکستان کو اس کی استعداد کے مطابق مقام حاصل کرنے کی اجازت نہیں دے گی کیونکہ یہ جمہوریت ہی ہے جو قانون سازی کے ذریعے مغربی استعماری پالیسیاں نافذ کرتی ہے جس کے نتیجے میں مغربی معیشتیں ہمارے علاقوں میں بالادست ہو جاتی ہیں۔

صرف خلافت ہی دنیا کی صف اول کی ریاست بننے کے لیے ایک طاقتور اور مختلف اقسام کی صنعتوں کی حامل صنعتی شعبہ کا قائم کرے گی۔ اس کے صنعتی شعبے میں فوجی صنعت کو مرکزی مقام حاصل ہو گا۔ خلافت میں عوامی اثاثوں سے متعلق صنعتی شعبہ عوامی ملکیت جبکہ دیگر ضروری صنعتیں نجی اور ریاستی ملکیت میں ہوں گی جس کے نتیجے میں معاشرے میں دولت کی بہتر گردش ممکن ہو سکے گی جبکہ اس کے ساتھ ساتھ افراد کی بہترین تخلیقی صلاحیتیں بھی سامنے آئیں گی۔ خلافت ریاست کی سرپرستی میں ریاست اور نجی شعبے میں مضبوط صنعتی تحقیق و ترقی کا شعبہ قائم کرے گی جس کے نتیجے میں ٹیکنالوجی کے میدان میں ترقی ہو گی اور صنعتی شعبہ مزید ترقی کرے گا۔ خلافت استعماری قرضوں اور ان سے منسلک تباہ کن شرائط کا خاتمہ کر دے گی اور اس کی جگہ شریعت کی بنیاد پر حاصل ہونے والے محصولات اور عوامی اثاثوں جیسے تیل و گیس کے شعبے سے حاصل ہونے والے محصولات کو صنعتی شعبے میں سرمایہ کاری کے لیے استعمال کرے گی۔

نوٹ: اس پالیسی کی تفصیلات اور قرآن و سنت سے تفصیلی دلائل جاننے کے لیے اس ویب سائٹ لنک کو دیکھیں۔

http://htmediapak.page.tl/policy-matters.htm

میڈیا آفس حزب التحریر ولایہ پاکستان


Today 2326 visitors (7745 hits) Alhamdulillah
=> Do you also want a homepage for free? Then click here! <=