Media Office Hizb ut-Tahrir Pakistan

PR 02 08 2013

Friday, 24th Ramadhan 1434H                           02/08/2013                                N0: PR13079

Press Release

American Raj’s “viceroy”, John Kerry’s visit to Pakistan

Kayani-Sharif regime has also assured to continue American war on Terror

The visit of the US Secretary of State, John Kerry has shown that the democratic rulers are always keen to receive American officials and their instructions. In the capital of Pakistan, John Kerry in front of local and international media, declared arrogantly and proudly that drone attacks will continue. The representative of Kayani-Sharif regime, Sartaj Aziz, replied in his declaration by guaranteeing Pakistan’s full support and cooperation for a partial withdrawal of American troops from Afghanistan, whilst securing American bases in Afghanistan, masked by a cover of her limited pullout of troops. Expressing mere concerns on drone attacks only shows that the Kayani-Sharif regime will continue to fight America’s crusade, for it is mere lip-services.

On the one hand John Kerry is so bold as to confirm the blowing up of our sovereignty by announcing the continuation of drone attacks, whilst on the other hand, Pakistan’s weak-kneed Prime Minister, Nawaz Sharif, warmly welcomed him at prime-minister house and participated in a photo-shoot session, barely able to conceal his joy, despite Kerry’s slap-in-the-face statements against Pakistan. The Kayani-Sharif regime has sunk to a new low, when they allowed this enemy to address the nation through official and private electronic media channels.

John Kerry and America must know that the people of Pakistan and its armed forces have not forgotten the incident of Abbotabad, the tragedy of Salala, the oppression on Afia Siddiqui and the two brothers who were killed by Raymond Davis. The people of Pakistan and its armed forces also know that it is America who is killing Muslims all over the world, dishonoring our mothers and sisters, seizing our lands and our resources and placing traitors and killers like Kayani, Bashar Al-Asad, Shaikh Hassena and Tayyab Erdogan over our heads. Therefore, the Muslims of Pakistan and their armed forces see America as their enemy and want to treat her like an enemy.

Hizb ut-Tahrir ask the sincere officers in the armed forces that how would you support these traitors in the political and military leadership, who welcome the murderers of your brothers, sisters, mothers, sons and daughters. Have you forgotten the martyrs of Salala who were your brothers-in-arms, deceived and murdered by America? Have you forgotten those thousands of your Muslim brothers who were killed in drone attacks, along with their wife and children?

Hizb ut-Tahrir knows that you also see America as your enemy, just as our Ummah sees them and you also hate America, as much as our Ummah hates her. Moreover Hizb ut-Tahrir also knows that you also have the same desire to see the end of the American Raj from Pakistan, again as our Ummah wants this to happen. So O sincere officers! Come forward and give Nussrah for the establishment of Khilafah to Hizb ut-Tahrir, under its Ameer Shiakh Ata Bin Khalil Abu al-Rashta, and end American Raj from Pakistan and this region. The establishment of the Khilafah will be the starting point to end American terrorism around the world and its demise as the world’s bully.

 


Shahzad Shaikh

Deputy to the official spokesman of Hizb ut-Tahrir in Pakistan

 

جمعہ، 24 رمضان، 1434ھ                              02/08/2013                              نمبر:PR13079

امریکی وائسرائے جان کیری کا دورہ پاکستان

کیانی و شریف حکومت نے بھی امریکی جنگ کو جاری رکھنے کی یقین دہانی کرادی

امریکی سیکریٹری خارجہ جان کیری کے دورہ پاکستان نے ثابت کردیا ہے کہ جمہوری  حکمران صرف اور صرف امریکی حکام کی آمد کے منتظر اور ان سے احکامات وصول کرنے کے لیے بے چین رہتے ہیں۔  جان کیری نے پاکستان کے دارلحکومت میں کھڑے ہو کرتمام تر ملکی و غیر ملکی میڈیا کے سامنے انتہائی تکبر اور فخر سے ڈرون حملوں کو جاری رکھنے کا اعلان کیا۔ اس اعلان کے بعد کیا نی و شریف حکومت کے نمائندہ سرتاج عزیز نے اس امریکی جارحیت کے جواب میں افغانستان سے نکلنے والے امریکی فوجیوں کی واپسی  اور محدود انخلاء کے نام پر افغانستان میں مستقل امریکی اڈوں کے قیام میں پاکستان کی جانب سے امریکہ کو مدد فراہم کرنے کی بھر پور یقین دہانی کرائی اور ڈرون حملوں پر پاکستان کے محض تحفظات کا اظہار کر کے اس بات پر مہر تصدیق ثبت کردی کہ کیانی و شریف حکومت بھی امریکی جنگ کو جاری و ساری رکھے گی۔

ایک طرف جان کیری ہماری ہی سرزمین پر کھڑے ہو کرڈرون حملوں کی صورت میں  پاکستان کی سالمیت کی دھجیاں اڑاتے رہنے کااعلان کررہا ہے تو دوسری جانب وزیر اعظم نواز شریف جان کیری کا وزیر اعظم ہاوس میں پرتباک خیر مقدم کرتے ہیں اور اور ہنس ہنس کر پاکستان کے دشمن کے ساتھ تصویریں بنواتے ہیں۔ کیانی و شریف حکومت کی بے شرمی کی انتہا اس وقت ہوئی جب اس دشمن کو سرکاری اور نجی الیکٹرانک میڈیا پر قوم کے سامنے امریکی موقف کوپیش کرنے کی آزادی بھی فراہم کردی گئی۔

جان کیری اور امریکہ یہ جان لے کہ پاکستان کے عوام اور افواج  نہ تو سانحہ ایبٹ آباد کو بھولے ہیں اور نہ ہی سلالہ میں شہید ہونے اپنے جوانوں کو اور نہ ہی وہ عافیہ صدیقی کے ساتھ ہونے والے ظلم و ستم کو بھولے ہیں اور نہ ہی ریمنڈ ڈیوس کے ہاتھوں قتل ہونے والے اپنے بھائیوں کو۔ پاکستان کے عوام اور افواج پاکستان یہ بھی جانتے ہیں کہ امریکہ دنیا بھر میں مسلمانوں کو قتل کرنے ، ان کی ماوں،بہنوں کو بے آبرو کرنے، ان کی زمینوں اور ان کے وسائل پر قبضہ کرنے اور ان پر کیانی ،بشار الاسد، شیخ حسینہ اورطیب اردگان  جیسے غداروں اور قاتلوں کو مسلط کرنے میں براہ راست ملوث ہے۔ لہذا پاکستان کے عوام اور افواج امریکہ کو اپنا دشمن سمجھتے ہیں اور اس کے خلاف دشمنوں جیسا سلوک ہوتا دیکھنا چاہتے ہیں۔

حزب التحریر افواج پاکستان میں موجود مخلص افسران سے پوچھتی ہے کہ کس طرح تم اپنے بھائیوں، ماوں ، بہنوں ،بیٹے اور بیٹیوں کے قاتلوں کا استقبال کرنے والے سیاسی وفوجی قیادت میں موجود غداروں کی حمائت کرسکتے ہو۔ کیا تم سلالہ میں شہید ہونے والے اپنے ساتھیوں کی شہادت کو بھول گئے ہو جنھیں امریکہ نے دھوکے سے قتل کردیا تھا اور کیا ڈرون حملوں میں بے دردی سے مارے جانے والے اپنے ہزاروں شہریوں کی لاشوں کو بھول گئے ہو جنھیں ان ہی کے گھروں میں اپنے بیوی بچوں سمیت موت کی نیند سلا دیا گیا؟

حزب  یہ جانتی ہے کہ تم بھی امریکہ کو اتنا ہی دشمن سمجھتے ہو جس قدر تمھاری امت اسے اپنا دشمن سمجھتی ہے اور تم بھی امریکہ سے اسی قدر نفرت کرتے ہو جس قدر امت امریکہ سے نفرت کرتی ہےاور حزب  یہ بھی جانتی ہے کہ تم بھی امریکی راج کے خاتمے کی اتنی ہی چاہت رکھتے ہو جس قدر پاکستان کے عوام رکھتے ہیں۔ تو اے افواج پاکستان کے مخلص افسران! آگے بڑھو اور شیخ عطا بن خلیل ابو الرَشتہ کی قیادت میں حزب التحریر کو خلافت کے قیام کے لیے نصرۃ فراہم کرو اور پاکستان اور اس خطے سے امریکی راج کا خاتمہ کردو۔ خلافت کا قیام ہی خطے اور دنیا بھر میں جاری امریکہ دہشت گردی کے خاتمے اور امریکی زوال کا نقطہ آغاز  بنے گا۔


پاکستان میں حزب التحریر کے ڈپٹی ترجمان

شہزاد شیخ


Today 1569 visitors (5095 hits) Alhamdulillah
=> Do you also want a homepage for free? Then click here! <=