Media Office Hizb ut-Tahrir Pakistan

PR 10 01 2013

Thursday, 28th of Saffar 1434H                          10/01/2013                                            N0: PR13004

Indian escalation on line of control

Khilafah will permanently end Hindu hostility at our borders

It is General Kayani's policies that have bolstered Indian aggression against us, whether in the recent border tensions or previous ones. Since the Clinton era, Kayani's master, America, has wanted to exploit Pakistan to win over India to its sphere of influence, with the promise of the permanent burial of the Kashmir issue, enhancing India's strategic depth in Afghanistan, strengthening India’s economy by gaining access to our huge market and the drastic reduction of our military capabilities, including its nuclear weapons. As General Musharraf's right hand man, General Kayani assisted Musharraf in establishing America’s military and intelligence presence to unprecedented levels within our borders, as well as providing the means for establishing and maintaining the American occupation of Afghanistan. Although the beneficiary of the Musharraf-Kayani partnership was America, it promptly opened the doors to the target of its aspirations, India, who now enjoys unprecedented influence within Afghanistan and beyond it into Pakistan's tribal areas and Baluchistan. And India breathed a sigh of relief as Kashmir was abandoned and our armed forces were ensnared and preoccupied in America's war of Fitna.  All this is how India has the nerve to look our armed forces in the eye.

The absence of Khilafah has not only brought us economic misery, it has brought us great humiliation in foreign policy and unprecedented danger to the security of our country at the hands of the Hindu State. Our misery and despair will only increase as traitors in the military and political leadership will continue to pursue the foreign plots against Islam and Muslims. It is upon each and every one of us to undertake the immediate and serious efforts to establish the Khilafah. Only a Khaleefah that rules by Islam will direct our sons, brothers and fathers in the armed forces as they deserve to be led. Only a Khaleefah will consolidate the armed forces of the Muslims to eradicate the foreign military and intelligence presence in the country. Only a righteous Khaleefah will work seriously to unify all the Islamic Lands, from Indonesia through to Morocco, Central Asia to Sudan, as a single state. Only the Khilfah will render us capable to end forever the Hindu aggression.

O armed forces of Pakistan! Hasten your movement for a true comprehensive change that turns the table on the heads of the traitors and their masters. Act before them and confound them, O brave people. Remove the traitors and grant the Nussrah for the establishment of the Khilafah.

إِنْ يَنْصُرْكُمُ اللَّهُ فَلا غَالِبَ لَكُمْ وَإِنْ يَخْذُلْكُمْ فَمَنْ ذَا الَّذِي يَنْصُرُكُمْ مِنْ بَعْدِهِ وَعَلَى اللَّهِ فَلْيَتَوَكَّلِ الْمُؤْمِنُونَ

If Allah helps you, no one can defeat you. And if He let you down, who is else that can help you? And in Allah let the believers put their trust.”

[Surah Aali Imran 3:160]

Media Office of Hizb ut-Tahrir in Pakistan

جمعرات28  صفر، 1434ھ                                              10/01/2013                                نمبر:PR13004

لائن آف کنٹرول پر بھارتی جارحیت

خلافت ہمیشہ کے لیے سرحدوں پر بھارتی جارحیت کا خاتمہ کر دے گی

یہ جنرل کیانی کی پالیسیوں کا نتیجہ ہے کہ بھارت پاکستان کے خلاف جارحیت کا ارتکاب کرنے کی جرأت کرتا ہے چاہے وہ حالیہ دونوں میں لائن آف کنٹرول پر پاکستان کی چیک پوسٹ پر حملہ ہو یا اس سے قبل ہونے والے حملیں ہوں۔ سابق امریکی صدر بل کلنٹن کے دور سے کیانی کا آقا امریکہ بھارت کو اپنے حلقہ اثر میں لانے کے لیے پاکستان کو استعمال کرتا آ رہا ہے۔ اس مقصد کو حاصل کرنے کے لیے امریکہ بھارت کو مسئلہ کشمیر کو دفن کرنے، افغانستان میں بھارتی اثر و رسوخ کو بڑھانے، بھارتی معیشت کو طاقتور بنانے کے لیے پاکستان کی مارکیٹ تک اس کو رسائی فراہم کرانے اور پاکستان کی فوجی خصوصاً ایٹمی صلاحیت میں کمی کروانے کی یقین دہانی کراتا ہے۔ جنرل مشرف کی دست راست ہونے کے ناطے، جنرل کیانی نے پاکستان میں امریکہ کی فوجی اور انٹیلی جنس موجودگی کو بے تہاشا بڑھانے اور افغانستان میں امریکی قبضے کو مستحکم کرنے میں جنرل مشرف کی زبردست اعانت کی۔ اس مشرف کیانی اتحاد کا امریکہ نے بھرپور فائدہ اٹھایا اور بھارت کو اپنے حلقہ اثر میں لانے کے لیے اس نے اپنے دروازے کھول دیے اور اب بھارت نا صرف افغانستان میں زبردست اثروروخ حاصل کر چکا ہے بلکہ اس کی پہنچ پاکستان کے قبائلی علاقوں اور بلوچستان تک پھیل گئی ہے۔ کشمیر سے دستبرداری اور اور ہماری افواج کاقبائلی علاقوں میں امریکی فتنے کی جنگ میں ملوث ہو جانے کے بعد بھارت نے سکون کا سانس لیا ہے اور رہی سہی قصرچند دن قبل ہی امریکہ کی خواہش پر افواج پاکستان کی جنگی ڈاکٹرائن میں اہم تبدیلہ کرتے ہوئے "اندرونی خطرے" کو پاکستان کی سلامتی کو درپیش سب سے بڑا خطرہ قرار دینے نے پوری کر دی ہے۔ یہ وہ وجوہات ہیں جس کی بنا پر بھارت کو اس قدر جرأت ہوئی کہ وہ ہماری افواج کی جانب میلی آنکھ سے دیکھ سکے۔

خلافت کی غیر موجودگی کی وجہ سے ناصرف ہم معاشی بد حالی کا شکار ہوئے ہیں بلکہ ہمارے خارجہ پالیسی ذلت و رسوائی کا باعث بن رہی ہے اور ہندو ریاست ہماری سلامتی کے لیے ایک بہت بڑا خطرہ ثابت ہو رہی ہے۔ ہماری بدحالی اور پریشانی مزید بڑھتی جائے گی کیونکہ سیاسی و فوجی قیادت میں موجود غدار مسلسل اسلام اور مسلمانوں کے خلاف کفار کے منصوبوں کو حمائت فراہم کرتے رہیں گے۔ ہم میں سے ہر ایک پر یہ ذمہ دارای عائد ہوتی ہے کہ وہ خلافت کے قیام کی کوشش میں فوراً شامل ہو جائے۔ صرف اسلام کی بنیاد پر حکمرانی کرنے والا خلیفہ ہی افواج میں موجود ہمارے بیٹوں اور بھائیوں کو وہ قیادت فراہم کرے گا جس کے وہ حق دار ہیں۔ صرف خلیفہ ہی ملک سے غیر ملکی کافر فوجیوں اور انٹیلی جنس اداروں کو بے دخل کرنے کے لیے مسلمانوں کی افواج کو منظم کرے گا۔ صرف خلیفہ ہی انڈونیشیا سے لے کر مراکش تک اور وسطی ایشیا سے لے کر سوڈان تک مسلمانوں اور اور ان کے علاقوں کو ایک ریاست تلے وحدت بخشے گا۔ اور صرف خلافت ہی ہمیں اس قابل بنائے گی کہ ہم ہندو جارحیت کے خطرے کا ہمیشہ ہمیشہ کے لیے خاتمہ کر دیں۔

اے پاکستان کی افواج! غداروں اور ان کے آقا امریکہ کے منصوبوں کو پلٹنے کے لیے اپنی حرکت میں تیزی لاوں۔ اے بہادروں! ان کے حرکت میں آنے سے قبل تم متحرک ہو جاو اور انھیں حیران کر دو۔ غداروں کو ہٹاو اور خلافت کے قیام کے لیے نصرة فراہم کرو۔

إِنْ يَنْصُرْكُمُ اللَّهُ فَلا غَالِبَ لَكُمْ وَإِنْ يَخْذُلْكُمْ فَمَنْ ذَا الَّذِي يَنْصُرُكُمْ مِنْ بَعْدِهِ وَعَلَى اللَّهِ فَلْيَتَوَكَّلِ الْمُؤْمِنُونَ

اگر اللہ تمھاری مدد کرے تو کوئی تم پر غالب نہیں آسکتا اور اگر وہ تمھیں چھوڑ دے تو اس کے بعد کون ہے جو تمھاری مدد کرے؟ ایمان والوں کو اللہ تعالی ہی پر بھروسہ رکھنا چاہیے۔

(ال عمران:160)

میڈیا آفس حزب التحریر ولایہ پاکستان


Today 2590 visitors (8337 hits) Alhamdulillah
=> Do you also want a homepage for free? Then click here! <=