Media Office Hizb ut-Tahrir Pakistan

PR 05 04 2013

Friday, 24th Jamadi-ul- Awwal 1434H                            05/04/2013                                N0: PR13035

Kayani pours salt on the wounds of Baluchistan

Only under the Khilafah did Baluchistan know of peace and will know of it again

During his 4 April visit to the capital of the troubled province of Baluchistan, Quetta, General Kayani, announced his pleasure at “inclusive elections” within the democratic system, urging the people to participate in these elections. This statement is pouring salt on the wounds of the noble Muslims of Baluchistan, for Democracy itself enabled the traitors within the military and political leadership to light fires of ethnic and sectarian strife within Baluchistan, for the sake of their American masters.

As Musharraf’s right hand man, Kayani personally worked to establish the “Raymond Davis” network. This covert intelligence network arranges target killings and bombings so as to grant America opportunity to pursue its plans for the immensely resource rich Baluchistan, which it calls “reconstruction,” whilst hiding the fact that it is responsible for the “demolition” in the first place! Thus this network works as America’s terrorist networks do in Iraq and many Latin American and African countries, causing immense civil strife and terrible bloodshed, to secure American interests. As if this were not enough, the partners in treason, Musharraf and Kayani, then established American troops within Baluchistan, on the Chaman Border, to add to the insecurity of our people and as a threat to our armed forces. Moreover, the role of the American consulate in Karachi in stoking the fires in Baluchistan is known, yet the traitors saw fit to permit the world’s second biggest American embassy in our capital.

And it was, and is, Democracy that made all of their Haraam, Halal through the Seventeenth Amendment and its successors. This is why the traitors and their American masters enthusiastically call the people to democracy, as it is democracy which secures their treachery, “purifying” their filth which contravene Islam flagrantly.

Only the Khilafah will secure the Muslims of Baluchistan, of all its races and schools of thoughts, as it did for centuries before. The entire province was under the Khilafah Rashidah and its Muslims knew of over nine centuries of peace under the Khilafah, before the British invasion of the Indian Subcontinent. And today, soon inshaaAllah, the Khilafah will end the hostile colonialist influence in Baluchistan which is the cause of the unrest. The Khilafah will close all American consulates, embassies, bases and deport its officials, terrorists who supervise bombings and assassinations. It will end all contacts with officials of foreign hostile powers to cut off the very means by which they scheme, divide and rule. The Khilafah will do all of this because neither the elected Khaleefah nor the elected members of the Majlis e Ummah have any right to overturn any command of Allah  SWT.

O officers of Pakistan’s armed forces, how much longer will you allow America’s chief agent, Kayani, to hijack your strength to keep democracy from collapsing before the rise of the Khilafah? Remove your support of this kufr democracy, it is time to give your Nussrah to Hizb ut-Tahrir for the immediate return of the Khilafah.

Media Office of Hizb ut-Tahrir in Pakistan

جمعہ، 24 جمادی الاول، 1434ھ                                            05/04/2013                                نمبر:PR13035

کیانی بلوچستان کے زخموں پر نمک چھڑک رہا ہے

صرف خلافت میں بلوچستان نے امن دیکھا تھا اور ایک بار پھر خلافت میں ہی امن دیکھے گا

جنرل کیانی نے 4 اپریل کو تباہ حال صوبے بلوچستان کے دارلحکومت کوئٹہ کا دورہ کیا۔ اس نے جمہوری نظام کے تحت ہونے والے انتخابات پر اپنی خوشی کا اظہار کیا اور بلوچستان کے عوام کو ان انتخابات میں بھرپور حصہ لینے کی دعوت دی۔ کیانی کا یہ بیان بلوچستان کے باوقار مسلمانوں کے زخموں پر نمک چھڑکنے کے مترادف ہے کیونکہ یہ جمہوریت ہی ہے جس کے ذریعے فوجی و سیاسی قیادت میں موجود غداروں نے بلوچستان میں اپنے آقا امریکہ کی خواہش پر فرقہ وارانہ اور لسانی نفرتیں پیدا کیں۔

سابق آمر جنرل پرویز مشرف کے دست راست جنرل کیانی نے اپنی نگرانی میں ملک میں "ریمنڈ ڈیوس نیٹ ورک" قائم کیا۔ یہ خفیہ انٹیلی جنس نیٹ ورک بم دھماکوں اور قتل و غارت گری کے واقعات کی منصوبہ بندی کرتا ہے تاکہ بلوچستان کے عظیم قدرتی خزانوں پر ہاتھ صاف کرنے کے مواقع پیدا ہوسکیں۔ ان خزانوں کے لوٹنے کو امریکہ تعمیر و ترقی کا نام دیتا ہے جبکہ حقیقت میں یہ اس خطے کے عوام کو ان قیمتی خزانوں سے محروم کرنے اور ان کی تباہی و بربادی کے منصوبے ہوتے ہیں۔ لہذا یہ نیٹ ورک اسی طرح سے کام کرتا ہے جیسے دوسرے امریکی دہشت گرد ادارے عراق، لاطینی امریکہ اور افریقی ممالک میں اپنی کاروائیاں کرتے ہیں جس کے نتیجے میں خانہ جنگیاں ہوتی ہیں اور خون کی ندیاں بہہ جاتی ہیں اور امریکہ اس افراتفری کا فائدہ اٹھا کر اپنے مفادات کی تکمیل کرتا ہے۔ اتنا سب کچھ کرنے کے بعد بھی جیسے یہ کافی نہیں تھا کہ اس ملک کے خلاف غداری میں شراکت دار مشرف اور کیانی نے اپنے لوگوں کو مزید عدم تحفظ کا شکار کرنے اور افواج پاکستان کے لیے مزید خطرات کو پیدا کرنے کے لیے بلوچستان میں چمن کی سرحد پر امریکی فوجیوں کو مستقل ٹھہرانے کا بندوبست کیا۔ اس کے علاوہ یہ بات سب جانتے ہیں کہ کراچی میں موجود امریکی قونصل خانے کا بلوچستان میں نفرتوں کی آگ کو بھڑکانے میں ایک اہم کردار ہے لیکن اس کے باوجود غداروں نے یہ مناسب سمجھا کہ اپنے ملک کے دارلحکومت میں امریکہ کو دنیا میں اپنا دوسرا بڑا سفارت خانہ بنانے کی اجازت دی جائے۔

یہ جمہوریت ہی تھی اور ہے جس نے سترویں آئینی ترمیم کے ذریعے ان غداروں کے حرام اعمال کو حلال قرار دیا۔ یہی وجہ ہے کہ غدار اور ان کے امریکی آقا پورے جوش و خروش سے لوگوں کو جمہوری نظام میں شرکت کی دعوت دیتے ہیں کیونکہ یہ جمہوریت ہی ہے جو ان کی غداریوں پر پردہ ڈالتی ہے اور ان کی غلاظتوں کو خوشنما بناتی ہے جو اسلام کے احکامات کے صریح خلاف ہے۔

صرف خلافت ہی بلوچستان کے مسلمانوں اور اس میں بسنے والے تمام رنگ و نسل اور مسالک کے لوگوں کو تحفظ فراہم کرے گی اور خلافت ایسا پہلے بھی کرچکی ہے۔ یہ پورا صوبہ خلافت راشدہ کا حصہ تھا اور برصغیر پر برطانیہ کے جابرانہ تسلط سے قبل اس کے لوگ امن و چین کی زندگی سے نو سو سال تک خلافت کے زیر سایہ مستفید ہوتے رہے۔ انشأاللہ جلد ہی خلافت بلوچستان میں استعماری مداخلت کا خاتمہ کر دے گی جو اس صوبے میں بے چینی اور تباہی و بربادی کی اصل وجہ ہے۔ خلافت تمام امریکی سفارت خانوں، قونصل خانوں اور اڈوں کو بند کر دے گی اور ان کے نمائندوں اور دہشت گردوں کو، جو دراصل بم دھماکوں اور قتل و غارت گری کی نگرانی کرتے ہیں، ملک بدر کر دے گی۔ خلافت دشمن ممالک کے نمائندوں سے تمام رابطے توڑ دے گی کیو نکہ انہی رابطوں کے ذریعے یہ سازشیں کرتے ہیں اور امت کو نفرتوں کی بنیاد پر تقسیم کرتے ہیں۔ خلافت یہ تمام اقدامات اٹھائے گی کیونکہ نہ تو خلیفہ اور نہ ہی امجلس امت کو اس بات کا اختیار ہے کہ وہ اللہ سبحانہ و تعالی کے کسی بھی حکم سے روگردانی کرسکیں۔

اے افواج پاکستان کے افسران! تم اور کتنے عرصے تک امریکہ کے چیف ایجنٹ کیانی کو اس بات کی اجازت دو گے کہ وہ تمھاری طاقت کے بل بوتے پر جمہوریت کو گرنے اور خلافت کے قیام کو روکنے کی کوشش کرے؟ آپ اس کفریہ جمہوری نظام کی حمائت سے دست بردار ہو جائیں۔ یہ وقت ہے کہ آپ خلافت کے فوری قیام کے لیے حزب التحریر کو نصرة فراہم کریں۔

میڈیا آفس حزب التحریر ولایہ پاکستان


Today 2091 visitors (7289 hits) Alhamdulillah
=> Do you also want a homepage for free? Then click here! <=