Media Office Hizb ut-Tahrir Pakistan

PR 01 10 2014





Wednesday
, 7th ZilHaj 1435 AH                         01/10/2014 CE                           No: PR14061

Press Release

Pakistan's Armed Forces Must Prepare to Fight the US Occupying Forces

Pakistan Army chief Gen Raheel Sharif performed on 30 September 2014 the ground-breaking of the National Counter-Terrorism Centre being set up near Kharian. “The centre will be a state-of-the-art facility with a large capacity to impart quality training to troops for combating terrorism, in all types of terrains,” a military spokesman said about the planned complex. This news comes on the same day when Afghan puppet regime signed a bilateral signed agreement a security which allows U.S to extend its occupation of Afghanistan for further ten years. According to documents released in Washington, the agreement calls for the deployment of around 10,000 US troops and will have nine bases in the Afghanistan, including in provinces that border Iran and Pakistan. At the same time, our arch rival India’s Prime Minister, Modi met U.S president Obama and they agreed to increase cooperation in intelligence sharing on terrorism and regional concerns including Afghanistan.

So, Pakistan's troops are to be trained to combat the continuing resistance to America's occupation of Afghanistan. This is even though fighting the American occupation is a duty in Islam. Thus the Raheel-Nawaz regime is facilitating the Americans in their occupation every step of the way. How can Pakistan welcome the signing of this security agreement, which will allow the biggest enemy of Islam and Muslims to station its troops and bases at the door step of the worlds only Muslims nuclear power? Traitors in the political and military leadership have no shame. They describe every anti Pakistan act, agreement and proposal as if it were in the national interest of Pakistan. Although these are all in favour of our enemy, America. Until today, they have kept the door open for America's terrorist network within Pakistan, allowing its personnel to roam freely in the sensitive areas to gather information for attacks, freeing its spies whenever they are caught۔ Then, the traitorous regime plays an active role in blackening the reputation of Jihad, acting as mouthpieces for the Americans, deliberately mixing up the sincere Mujahideen who fight the Americans with those shadowy figures that attack the armed forces. And finally this criminal regime deploys our armed forces and security personnel in the tribal areas, to fight their own Muslim brothers in a miserable war of Fitnah, burning pure Muslim blood on both sides as a fuel to secure America's Raj and plunging the people of the region into homelessness and despair.

It is high time that the sincere within the armed forces granted Nussrah for the return of the Khilafah to these lands, which will mobilize the Muslims of the tribes and armed forces as one force against the American occupation. Allah swt said,

يٰأَيُّهَا ٱلَّذِينَ آمَنُواْ هَلْ أَدُلُّكمْ عَلَىٰ تِجَارَةٍ تُنجِيكُم مِّنْ عَذَابٍ أَلِيمٍ ط تُؤْمِنُونَ بِٱللَّهِ وَرَسُولِهِ وَتُجَاهِدُونَ فِى سَبِيلِ ٱللَّهِ بِأَمْوَالِكُمْ وَأَنفُسِكُمْ ذٰلِكُمْ خَيْرٌ لَّكُمْ إِن كُنتُمْ تَعْلَمُونَ ط يَغْفِرْ لَكُمْ ذُنُوبَكُمْ وَيُدْخِلْكُمْ جَنَّاتٍ تَجْرِى مِن تَحْتِهَا ٱلأَنْهَارُ وَمَسَاكِنَ طَيِّبَةً فِى جَنَّاتِ عَدْنٍ ذٰلِكَ ٱلْفَوْزُ ٱلْعَظِيمُ

“O You who believe! Shall I guide you to a commerce that will save you from a painful torment. That you believe in Allah and His Messenger (Muhammad), and that you strive hard and fight in the Cause of Allah with your wealth and your lives, that will be better for you, if you but know! (If you do so) He will forgive you your sins, and admit you into Gardens under which rivers flow, and pleasant dwelling in Gardens of 'Adn - Eternity ['and (Edn) Paradise], that is indeed the great success.”

[Al-Saff: 10-12]

Media Office of Hizb ut-Tahrir in the Wilayah of Pakistan


بدھ،
07 ذی ا لحج ، 1435ھ                             01/10/2014                              نمبرPR14061:

افواج پاکستان کولازمی امریکہ کی قابض افواج  سے لڑنے کی تیاری کرنی چاہیے

          افواج پاکستان کے سربراہ جنرل راحیل شریف نے 30 ستمبر 2014 کو قومی ادارہ برائے انسداد دہشت گردی کے فوجی مرکز کا کھاریاں میں افتتاح کیا۔ فوج کے ترجمان نے اس ادارے کے بارے میں  بتایا کہ "انتہائی اعلیٰ سہولیات سے مزین اس ادارے میں افواج کو ہر قسم کے علاقے میں دہشت گردی سے لڑنے کی تربیت فراہم کرنے کی وسیع صلاحیت موجود ہے"۔ یہ خبر اسی دن منظر عام پر آئی جب کٹھ پتلی افغان حکومت  نے امریکہ کے ساتھ ایک سکیورٹی معاہدے پر دستخط کیے جس کے تحت  امریکہ مزید دس سال تک افغانستان پر اپنا قبضہ برقرار رکھ سکے گا۔ اس معاہدے سے متعلق واشنگٹن میں جاری ہونے والی دستاویزات کے مطابق امریکہ  افغانستان میں دس  ہزار امریکی فوج  رکھ سکے گا اور اس کو  نو اڈے حاصل ہوں گے جن میں وہ اڈے بھی شامل ہیں جو پاک افغان سرحد کے ساتھ واقع ہیں۔ اسی دوران ہمارے ازلی دشمن بھارت کے وزیر اعظم مودی نے امریکہ کے صدر اوباما سے ملاقات کی جس میں دونوں نے اس بات پر اتفاق کیا کہ دہشت گردی اور خطے سے متعلق خدشات کے حوالے سے انٹیلی جنس کی معلومات کا تبادلہ بڑھایا جائے جس میں افغانستان بھی شامل ہے۔

          اس طرح پاکستان کی افواج کو امریکی قبضے کے خلاف مزاحمت کرنے والوں سے لڑنے کے لئے تیار کیا جارہا ہے جبکہ امریکہ کے قبضے کے خلاف لڑنا اسلام نے فرض قرار دیا ہے اور راحیل-نواز حکومت امریکہ کو اپنا قبضہ برقرار رکھنے کے لئے اس کو ایک ایک    قدم پر معاونت فراہم کررہی ہے۔ یہ کیسے ہوسکتا ہے کہ پاکستان اس معاہدے پر دستخط کو خوش آئیند قرار دے جس کے ذریعے اسلام اور مسلمانوں کے سب بڑے دشمن امریکہ کو دنیا کی واحد مسلم ایٹمی قوت کی دہلیز پر اڈے قائم کرنے اور فوجوں کو رکھنے کی اجازت مل جائے؟ پاکستان کی سیاسی و فوجی قیادت میں موجود غداروں کو کوئی شرم نہیں کہ وہ ہر اس اقدام، معاہدے اور تجویز کو پاکستان کے مفاد میں قرار دے دیتے ہیں جو درحقیقت پاکستان کے مفاد میں قطعاً نہیں ہوتا بلکہ ہمارے دشمن امریکہ کے مفاد میں ہوتا ہے۔ آج کے دن تک سیاسی و فوجی قیادت میں موجود غداروں نے پورا ملک امریکی دہشت گردی کے نیٹ ورک کے لئے کھول رکھا ہے جو حساس ترین علاقوں میں حملے کروانے کے لئے آزادی سے معلومات اکٹھی کرتے پھرتے ہیں اور اگر یہ امریکی پکڑے جائیں تو انہیں رہا کردیتے ہیں۔ اس کے بعد غدار حکومت جہاد کو بدنام کرنے کے لئے امریکی ترجمان کا کردار ادا کرتی ہے اور جانتے بوجھتے ہوئے مخلص مجاہدین کو، جو افغانستان میں امریکہ کے خلاف لڑ رہے ہیں، ان لوگوں سے ملادیتے ہیں جن کے کردار انتہائی مشکوک ہیں اور جوافواج پاکستان پر حملے کرتے ہیں۔ اور آخر میں یہ مجرم حکومت ہماری افواج کو  قبائلی علاقوں میں اپنے ہی مسلمان بھائیوں سے اس غلیظ فتنے کی جنگ لڑنے کے لئے بھیجتی ہے اور پھر اس کے نتیجے میں دونوں جانب سے مسلمانوں کا ہی خون امریکی راج کے استحکام کے لئے بہتا ہے اور یہ خطہ بدامنی اور بد حالی کا شکار ہوجاتا ہے۔

          یہی وقت ہے کہ افواج میں موجود مخلص افسران خلافت کے قیام کے لئے نصرۃ فراہم کریں جو مسلمانوں کی افواج اور قبائل کو قابض امریکہ کے خلاف ایک قوت کی شکل میں متحرک کرے گی۔ اللہ سبحانہ و تعالٰی فرماتے ہیں،

يٰأَيُّهَا ٱلَّذِينَ آمَنُواْ هَلْ أَدُلُّكمْ عَلَىٰ تِجَارَةٍ تُنجِيكُم مِّنْ عَذَابٍ أَلِيمٍ ط تُؤْمِنُونَ بِٱللَّهِ وَرَسُولِهِ وَتُجَاهِدُونَ فِى سَبِيلِ ٱللَّهِ بِأَمْوَالِكُمْ وَأَنفُسِكُمْ ذٰلِكُمْ خَيْرٌ لَّكُمْ إِن كُنتُمْ تَعْلَمُونَ ط يَغْفِرْ لَكُمْ ذُنُوبَكُمْ وَيُدْخِلْكُمْ جَنَّاتٍ تَجْرِى مِن تَحْتِهَا ٱلأَنْهَارُ وَمَسَاكِنَ طَيِّبَةً فِى جَنَّاتِ عَدْنٍ ذٰلِكَ ٱلْفَوْزُ ٱلْعَظِيمُ

"اے ایمان والو! کیا میں تمہیں وہ تجارت بتا دوں جو تمہیں دردناک عذاب سے بچا لے؟ اللہ تعالٰی پر اور اس کے رسولﷺ پر ایمان لاؤ اور اللہ کی راہ میں اپنے مال اور اپنی جانوں سے جہاد کرو۔ یہ تمہارے لئے بہتر ہے اگر تمہیں علم ہو۔ اللہ تعالٰی تمہارے گناہ معاف فرمادے گااور تمہیں ان جنتوں میں پہنچائے گا جن کے نیچے نہریں جاری ہوں گی اور صاف ستھرے گھروں میں جو جنت عدن میں ہوں گے، یہ بہت بڑی کامیابی ہے"

(الصف:10-12)۔

پاکستان میں حزب التحریر کا میڈیا آفس


Today 3595 visitors (11230 hits) Alhamdulillah
=> Do you also want a homepage for free? Then click here! <=