Media Office Hizb ut-Tahrir Pakistan

PR 23 05 2015 Syria

Saturday, 05th Shaban 1436 AH                         23/05/2015 CE                           No:1436 / 232

Press Release

The First Khilafah Conference Held in Ash-Sham the Abode of Islam!

Hizb ut-Tahrir/ Wilayah Syria organized the first conference on the 94th anniversary of the destruction of the Khilafah under the title: “The Revolution of Ash-Sham is the Ummah’s Revolution towards the Establishment of the Khilafah” that took place in the northern countryside of Idlib, on Saturday 23/05/2015.

This conference comes to confirm to the whole world the steadfastness of the people of Ash-Sham in their demand to establish the rightly guided Khilafah, and their rejection of the civil state project, which is promoted by the Kafir West, and stand in the way of all those tempted to make concessions, in the beginning of selling of the revolution to its enemies.

The conference saw a significant presence in spite of all the difficulties and dangers that surround the land of Ash-Sham in general. During the course of the conference, speeches were delivered by Hizb personalities and some scholars from Ash-Sham. The participants confirmed the need of the revolution for a clear political project that the Ummah and people of power in it adopts, until this force is embraced by the People, thus constituting a strong barrier in the face of the West and its plans and establishes the rule of Allah on earth. The participants also stressed the magnitude of the catastrophe that befell the Muslims since their state fell, as they also stressed the obligation to work for its restoration. In a speech entitled: “Ash-Sham’s Revolution between the Civil State and the Islamic Khilafah”, the speaker outlined the civil state project posed by the Kaffir West and exposed those who have embraced it, like the coalition and others, and stated that the people of Ash-Sham will only accept the Khilafah project as an alternative. During the course of the conference program, there were several activities, events, and segments of poetry reading; in which participants read out poems inspired by Ash-Sham’s revolution. There were addresses with messages to the conference by:  Br. Sharif Zayed, Head of the Media Office of Hizb ut-Tahrir / Wilayah Egypt and Br. Abdullah Ali Al-Qadi,  Member of the Media Office of Hizb ut-Tahrir / Wilayah Yemen, and  Dr. Maher Al-Ja’bari and Dr. Musab Abu ‘Arqoob, Members of the Media Office of Hizb ut-Tahrir in the Blessed Land of Palestine.  Messages were also read from Afghanistan and Tunisia.  Today as we witness the first Khilafah Conference taking place in the blessed land of Ash-Sham, our eyes yearn for giving the pledge of allegiance to the Khaleefah of the Muslims in the Umayyad Mosque in Damascus; this matter is easily achievable by Allah (swt).

Ahmad Abdul Wahab

Head of the Media Office of Hizb ut-Tahrir

Wilayah of Syria

جمعرات، 05 رجب، 1436ھ                             23/05/2015                                نمبر1436 / 232:

اسلام کے مسکن شام میں پہلی خلافت کانفرنس منعقد ہوئی

        سقوط خلافت کی چورانوے (94) سال مکمل ہونے کے موقع پر حزب التحریر ولایہ شام نے ایک کانفرنس منعقد کی۔ اس کانفرنس کا عنوان تھا: "خلافت کے قیام کے لئے شام کا انقلاب امت کا انقلاب ہے"۔ یہ کانفرنس ہفتہ 23 مئی 2015 کو ملک کے شمالی حصے ادلیب میں منعقد ہوئی۔

        اس کانفرنس نے پوری دنیا کے سامنے شام کے لوگوں کی جانب سے خلافت کے قیام کے مطالبے پر صبر اور استقامت کے ساتھ قائم رہنے اور سیکولر ریاست کے منصوبے کو رد کرنے پر مہر لگادی ہے جس کی مغربی کفار حمایت کر رہے ہیں۔ شام کے لوگ ہر اس شخص کے مکروہ عزائم کی راہ میں حائل ہو گئے ہیں جو ان کے مطالبات سے دستبرادری کا اظہار اور اس انقلاب کو دشمن کے ہاتھوں بیچنے کی کوشش کرتا ہے۔

        اس بات کے باوجود کہ شام کی صورتحال کس قدر خطرناک اور مشکل  ہے، کانفرنس میں بڑی تعداد میں لوگ شریک ہوئے۔ کانفرنس کے دوران شام میں حزب کی شخصیات اور کچھ دانشوروں نے خطاب کیا۔ شرکاء نے اس بات پر اتفاق کیا کہ ایک واضح سیاسی منصوبے کی ضرورت ہے جس کو امت اور اہل قوت اختیار کرلیں تاکہ مغرب اور اس کے شیطانی منصوبوں کے خلاف زبردست مزاحمتی دیوار کھڑی کردی جائے اور زمین پر اللہ کی حکمرانی قائم کردی جائے۔ شرکاء نے اس بات پر بھی زور دیا کہ جب سے امت نے اپنی ریاست کھوئی ہے اس پر مشکلات اور آفات کے پہاڑ ٹوٹ رہے ہیں لہٰذا اس ریاست کی بحالی کے لئے کام کرنا فرض ہے۔ ایک تقریر میں جس کا عنوان تھا: "شام کا انقلاب اسلامی خلافہ اور شہری ریاست کے درمیان"، مقرر نے واضح کیا کہ شہری ریاست کا منصوبہ مغربی کفار کا ہے اور ان لوگوں کو بے نقاب کیا جنہوں نے اس کو اختیار کرلیا ہے جیسا کہ اتحاد والے اور دیگر لوگ اور کہا کہ شام کے لوگ متبادل کے طور پر صرف خلافت کے منصوبے کو ہی قبول کریں گے۔

        کانفرنس کے دوران کئی نظمیں بھی پڑھیں گئیں جو شام کے انقلاب سے متاثر ہو کر لکھیں گئیں تھیں۔ اس کے علاوہ حزب التحریر ولایہ مصر میں میڈیا آفس کے سربراہ جناب شریف زید اور جناب عبداللہ علی الاقاضی، حزب التحریر ولایہ یمن کے میڈیا آفس کے اراکین جناب ڈاکٹر مہر الجابری اور ڈاکٹر مصعب ابو ارقوب، فلسطین میں حزب التحریر کے میڈیا آفس کے اراکین کے پیغامات اور افغانستان اور تیونس سے بھیجے گئے پیغامات بھی پڑھ کر سنائے گئے۔

        آج جب ہم شام میں پہلی خلافت کانفرنس کے انعقاد کو دیکھ رہے ہیں تو ہماری آنکھیں اس وقت کو بھی جلد ہی دیکھنا چاہتی ہیں جب مسلمان دمشق کی امیہ مسجد میں اپنے خلیفہ کو بیعت دے رہے ہوں اور اللہ سبحانہ و تعالٰی کی مدد سے ایسا ہونا کچھ مشکل نہیں ہے۔

احمد عبدالوہاب

ولایہ شام میں حزب التحریر کے میڈیا آفس کے سربراہ


Today 723 visitors (2648 hits) Alhamdulillah
=> Do you also want a homepage for free? Then click here! <=