Media Office Hizb ut-Tahrir Pakistan

No Russian or American Military Intervention will Prevent the Downfall of the Tyrant of Shaam


بسم الله الرحمن الرحيم

No Russian or American Military Intervention will Prevent the Downfall of the Tyrant of Shaam and the Establishment of the Rule of Allah upon His Earth

(Translated)

Within the atmosphere of the murderer Bashar Assad’s (impending) defeat, the diminishing ability of his army to protect his regime, the arrival of a military threat to the sectarian regions and the severe restlessness within them, and in the atmosphere of the ineffectiveness of the Iranian intervention to save it, in addition to America’s failure to form a core force for it from the fighters within Syria, and the real fears in respect to a sudden fall of this regime which Obama himself has expressed... In these atmospheres, the threatening Russian position has recently come to the fore in respect to direct military intervention utilising advanced kinds of weaponry which cannot be used by other than Russian experts. This is also amid a media atmosphere of fear mongering and intimidation, the evil of which was initiated by America announced in audio and pictures whilst being followed by statements and analyses about this intervention. This all represents a step by which both America and Russia aim to afflict the Muslims with despair so that they are pushed to proceed in accordance to the American solution based upon the implementation of what was decided in Geneva. The start of which is a transitional stage that is being talked about widely now due to America’s acceptance of the butcher Bashar as being a part of it.

This fraudulent Hollywood style image does not represent anything other than more American failure through the failure of its criminal agent in respect to dealing decisively with the state of affairs in accordance to its interests, as when was it that Russia was cut off from supplying the Syrian regime with various types of weapons in order to kill the Muslims? Indeed there is only really one new matter that has come about and this is that Assad no longer has enough troops to keep in him in the ruling position. This is what he stated in his recent speech and the meaning of which is that he is on the verge of defeat and as a result America is also on the verge of defeat. It is in this context that this (latest) step has come and which in truth is to compensate him and save him. However America which is insolent in its hypocrisy and particularly in respect to Syria wishes to turn the facts upside down and it is for this reason that we have said that this step is no more than a Hollywood style fraud. This is because Assad has failed in spite of all of this American support that has been provided to him and particularly the support from Iran that has been put at his disposal and still remains so with its ample possible resources. This is whilst it has supplied it with money, experts, intelligence agents and officers from its army and revolutionary guards. It has also supplied it with mercenaries and sectarian militias drawn from Lebanon, Iraq, Yemen and Afghanistan. It is in this context that this step has come within an emergency plan to save him (Bashar) and as such it reflects the situation of American failure.

If the American policy was described in the terms of Bush as being criminal against the Muslims, then this policy Obama’s term, in addition to being criminal, can be characterised by plotting, deception and playing upon the ropes which also includes (as victims or tools) the Russians themselves. This is because Russia is proceeding in accordance to the American plans whilst it doesn’t possess any other course to proceed along of its own. The stances and positions that it has adopted are exactly what America wants, which is the changing and moving of the compass of the conflict towards fighting against Islam under the pretext of fighting terrorism whilst the solution remains upon the resolutions of Geneva. America gave its blessing to this Russian intervention as it said: “The United States of America welcomes any Russian contributions to confront the ISIS organisation”. This is whilst European diplomats made clear to the AKI (Italian) news agency that, “This Russian movement has come as a result of American authorisation”.

O patient and honest Muslims of Syria ash-Shaam: We all feel that Allah is with us and that He is our Protector. So Allah the All Powerful and All Capable has made America’s plotting come back to surround its people whilst the terrible criminality perpetrated against our peoples is afflicting them just as it is afflicting us. However our dead are in Jannah In Shaa’ AllahTa’Aalaa whilst theirs are in the fire. Allah (swt) said:

﴿وَلَا تَهِنُوا فِي ابْتِغَاءِ الْقَوْمِ إِن تَكُونُوا تَأْلَمُونَ فَإِنَّهُمْ يَأْلَمُونَ كَمَا تَأْلَمُونَ وَتَرْجُونَ مِنَ اللَّـهِ مَا لَا يَرْجُونَ وَكَانَ اللَّـهُ عَلِيمًا حَكِيمًا

“And do not weaken in pursuit of the enemy. If you should be suffering - so are they suffering as you are suffering, but you expect from Allah that which they expect not. And Allah is ever Knowing and Wise”

[An-Nisaa’: 104].

This revolution which has given the most valuable that it possesses will not yield its reward unless it enjoys the pleasure of Allah (swt) so that He rewards it with the establishment of the rightly guided Khilafah which the Messenger of Allah (saw) gave glad tidings of that it will be upon the methodology of the Prophethood. Indeed it is a great honour for it to be established in ash-Shaam before any other place and for ash-Shaam to be its centre homeland. The most truthful and reliable in speech when talking about the later times said that after this oppressive rule that we are currently living under:

«ثُمَّ تَكُونُ خِلَافَةً عَلَى مِنْهَاجِ النُّبُوَة»

“Then there will be a Khilafah upon the methodology of the Prophethood” i.e. rightly guided.

And he (saw) said:

«عُقْرَ دَارِ الإسْلامِ فِي الشَّام»

“The central abode of Islam is in Shaam”.

6th Dhul Hijjah 1436 AH                                                                       Hizb ut-Tahrir

20/09/2015 CE                                                                                    Wilayah Syria

بسم اللہ الرحمن الرحیم

روسی یا امریکی عسکری مداخلت شام کے سرکش کے سقوط اور زمین پر اللہ کی حکمرانی قائم کرنے کی راہ میں حائل نہیں ہو سکتی

اس فضاء میں جبکہ سفاک بشارالاسد کی شکست یقینی ہے، اِس کی فوج کی جانب سے اُس کی حکومت کی حفاظت کرنے کی صلاحیت میں روز بروز کمی واقع ہورہی ہے، اس کے گروہ (علوی فرقے) کے علاقوں تک عسکری خطرات پہنچ چکے ہیں اور ان کے اندر شدید بے چینی پائی جاتی ہے، سرکش کو بچانے میں ایرانی مداخلت کے کارگر نہ ہونے اور پھر امریکہ کی جانب سے داخلی طور پر اپنے جنگجووں کی داغ بیل ڈالنے میں ناکامی اور اس سب کے نتیجے میں اس حکومت کے اچانک زمین بوس ہونے کا حقیقی خطرہ جس کا اظہار اوباما نے بھی کیا۔ اس صورتحال میں روس کا دھمکی آمیز موقف سامنے آیا اور ایسے جدید تر اسلحے کے ساتھ براہ راست عسکری مداخلت کی جس کو استعمال صرف روسی ماہرین ہی کرسکتے ہیں۔ ایسی فضاء میں جہاں میڈیا نے خوف اور ہولناکی کا ماحول ایسی آڈیوز اور ویڈیوز سے پیدا کیا ہے جس کی ڈوریں امریکہ سے ہلائی جا رہی ہیں، پھر اس مداخلت کے بارے میں بیانات سامنے آئے اور اس پر تبصرے کیے گئے۔ اس اقدام سے امریکہ اور روس دونوں کا مقصد مسلمانوں کو جنیوا فیصلوں کی بنیاد پر قائم امریکی حل کو قبول کرنے کے لیے خوفزدہ اور مجبور کرنا ہے۔ اس حل کی ابتدا عبوری مرحلے سے ہو گی، جس کے حوالے سے گفتگو بھی کی جا رہی ہے کیونکہ امریکہ یہ قبول کر رہا ہے کہ سفاک بشار اس حل کا حصہ ہو گا۔

یہ ہالی ووڈ کی طرح کا خوساختہ ماحول امریکہ کے لیے مزید ناکامی کا باعث ہو گا اور اس کا مجرم ایجنٹ صورتحال کو قابو کرنے میں مزید ناکام ہو گا کیونکہ روس نے شامی حکومت کی انواع و اقسام کے اسلحے سے امداد کب روکی تھی جس کا مقصد مسلمانوں کو قتل کرنا تھا؟!۔ ہاں ایک بات سنجیدہ ہے اور وہ یہ کہ اسد کے پاس اپنی حکومت کو بچانے کے لیے فوجیوں کی تعداد نا کافی تھی۔ اس بات کا اعتراف بشار نے اپنے تازہ ترین بیان میں بھی کیا۔ لہٰذا اس کا مطلب یہ ہے کہ وہ شکست کے دہانے پر ہے اور جس کے نتیجے میں امریکہ کو بھی شکست ہو گی۔ یہ ہے وہ صورتحال جس کے تناظر میں حالیہ قدم اٹھایا گیا ہے اور درحقیقت جس کا مقصد بشار کی مدد کرنا اور اسے بچانا ہے۔ مگر امریکہ، جو منافقت میں تمام حدیں پار کر چکا ہے، نے شام میں حقائق کو مصنوعی طریقے سے تبدیل کرنا چاہا، اور اسی وجہ سے ہم نے اس کو ہالی وڈ کی طرح کا ایک خود ساختہ منصوبہ کہا۔ اور ایسا اس لیے ہے کہ اسد امریکہ کی اس قدر کھلی اور واضح معاونت اور حمایت کے باوجود ناکام ہو گیا، خاص کر ایران کو مکمل طور پر اس کی خدمت میں لگانے کے باوجود جو ابھی تک لگا ہوا ہے اور تمام تر دستیاب وسائل کو استعمال کر رہا ہے۔ ایران نے بشار کی پیسے، ماہرین، انٹلیجنس اور اپنی فوج اور انقلابی گارڈز کے افسران کے ذریعے مدد کی ہے۔ ایران نے ہی بشار کی مدد فرقہ ورانہ عسکری ملیشیا اور کرائے کے فوجیوں سے کی جنہیں لبنان، عراق، یمن اور افغانستان سے لیا گیا تھا۔ یہ ہے وہ صورتحال جس کے اندر یہ ہنگامی قدم بشار کو بچانے کے لیے اٹھایا کیا گیا ہے اور یہ سب کچھ امریکہ کی ناکامی کی عکاسی کر تی ہے۔

مسلمانوں کے بارے میں امریکہ کی پالیسی بش کے زمانے میں مجرمانہ تھی تو یہی پالیسی اوباما کی بھی ہے، اس میں صرف جرائم کا اضافہ ہوا، اس میں مکاری و دھوکہ بازی کا اضافہ ہوا حتی کہ خود روس بھی اس مکاری کا شکار ہے۔ ایسا اس لیے ہے کیونکہ روس امریکی منصوبے پر عمل پیرا ہے جبکہ اُس کا اپنا کوئی الگ منصوبہ نہیں ہے جس پر وہ خود عمل کرے۔ اس کا موقف بالکل وہی ہے جو امریکہ چاہتا ہےجو کہ یہ ہے کہ امریکہ اس کشمکش کو دہشت گردی کے خلاف جنگ کے پردے میں اسلام کے خلاف جنگ بنانا چاہتا ہے اور مسئلے کا حل جنیوا فیصلوں کی اساس پر کرنا چاہتا ہے۔ اس روسی مداخلت کو امریکہ نے یہ کہہ کر خوش آئند قرار دے دیا کہ، "امریکہ روس کی جانب سے داعش تنظیم کے خلاف کسی بھی شرکت کو خوش آمدید کہتا ہے"۔ جبکہ یورپی سفارت کاروں نے اٹلی کے "آکی" نیوز ایجنسی سے بات کرتے ہوئے کہا کہ "یہ روسی حرکت امریکی اجازت کا نتیجہ ہے"َ۔

اے شام کے صابر اور مخلص مسلمانو! ہم سب یہ محسوس کر رہے ہیں کہ اللہ ہمارے ساتھ ہیں اور وہ ہمارے محافظ ہیں۔ لہٰذا امریکی مکر کو اللہ قدرت اور طاقت والے نے اسی پر الٹ دیا، جبکہ ہمارے لوگوں کے خلاف انواع و اقسام کے جرائم کا ارتکاب کیا گیا مگر دشمن کو بھی زخم لگے ہیں جیسا کہ ہمیں لگے ہیں۔ تاہم ہمارے قتل ہونے والے انشاء اللہ جنت میں ہیں اور دشمن کے مرنے والے جہنم میں ہیں۔ اللہ تعالی فرماتا ہے،

﴿وَلَا تَهِنُوا فِي ابْتِغَاءِ الْقَوْمِ إِنْ تَكُونُوا تَأْلَمُونَ فَإِنَّهُمْ يَأْلَمُونَ كَمَا تَأْلَمُونَ وَتَرْجُونَ مِنَ اللَّهِ مَا لَا يَرْجُونَ وَكَانَ اللَّهُ عَلِيمًا حَكِيمًا

"ان کے مقابلے میں حواس باختہ مت ہو اگر تمہیں دکھ پہنچتا ہے تو ان کو بھی دکھ پہنچتا ہے جیسا کہ تمہیں دکھ پہنچتا ہے مگر تم اللہ سے جو امید رکھتے ہو وہ ایسی امید نہیں رکھتے اور اللہ ہی جاننے والا اور حکمت والا ہے" (النساء:104)۔

اس تحریک نے جو اپنی سب سے قیمتی چیز پیش کی، اس کا صلہ اس کے سوا کچھ نہیں ہو سکتا کہ اللہ سبحانہ وتعالیٰ راضی ہو جائیں اور اس کے نتیجے میں وہ خلافت راشدہ قائم ہو جس کی بشارت رسول اللہ ﷺ نے دی ہے کہ وہ نبوت کے طرز پر خلافت ہو گی۔ یہ اللہ کی طرف سے عظیم شرف ہوگا کہ یہ دوسروں سے پہلے شام میں قائم ہو، اور شام ہی اس کا مسکن ہو۔ جیسا الصادق اور المصدوق ﷺ نے فرمایا کہ یہ آخر زمانے جابرانہ حکمرانی کے بعد قائم ہوگی جس میں ہم رہ رہے ہیں:

«ثم تكون خلافة على منهاج النبوة»

"پھراس کے بعد نبوت کے طرز پر خلافت قائم ہو گی" یعنی خلافت راشدہ ہوگی۔

اور آپ ﷺ نے یہ بھی فرمایا:

«عقر دار الإسلام في الشام»

"اسلام کا مسکن شام میں ہے"

6 ذی الحجۃ 1436 ہجری                                                    حزب التحریر

20 ستمبر 2015 عیسوی                                                                                 ولایہ شام


Today 2592 visitors (8398 hits) Alhamdulillah
=> Do you also want a homepage for free? Then click here! <=