Media office Hizb ut-Tahrir Wilayah of Pakistan

Home


بسم الله الرحمن الرحيم

North Waziristan Operations is a Treachery against Pakistan's Armed Forces

During the blessed month of Ramadhan in which Muslims have celebrated victories over their enemies for over fourteen centuries, the Raheel-Nawaz regime is conducting military operations in North Waziristan. However, rather than being a cause for celebration, the North Waziristan military operations are a grave treachery against Pakistan's armed forces aimed at destroying their ability to challenge the malignant American plan for the region.

Today, America is seeking to establish a permanent presence in Afghanistan, on the doorstep of the world's only Muslim nuclear power, Pakistan. This presence extends to tens of thousands of security personnel and several bases, under the guise of a partial, limited withdrawal. However, throughout her occupation, America is deeply aware of the grave threat to its plan from Pakistan's armed forces, should they be led by a sincere Islamic leadership. In an interview in March 2009, David Kilcullen, advisor to the US CENTCOM commander, said, “Pakistan has 173 million people, 100 nuclear weapons, an army bigger than the US Army…We’re now reaching the point (of)…an extremist takeover -- that would dwarf everything we’ve seen in the war on terror today.” An article published in the New Yorker on 16 November 2009 stated, “The principal fear is mutiny—that extremists inside the Pakistani military might stage a coup…A senior Obama Administration official brought up Hizb ut-Tahrir…whose goal is to establish the Caliphate (Khilafah).”

America knows the great capability of Pakistan's armed forces in ending foreign occupation of Muslim Land. She observed that when the Soviet Union invaded Afghanistan, the highly capable intelligence of Pakistan's armed forces, the Inter-Services Intelligence (ISI), organized and enabled the tribal fighters against the Russian occupation, bloodying Russia's nose such that she withdrew completely and never dared to return since. So, now that America herself invaded Afghanistan, Pakistan's armed forces have the ability to drive her out of the region forever. And America also knows that North Waziristan is the key to Pakistan's strategic depth in the region, protecting its lands and people from harm.

So, in order to simultaneously divide the Muslims, sink the armed forces into a quagmire of civil war and amputate Pakistan's strategic depth, America specifically intensified demands for operations in North Waziristan, since September 2011. And just before the current operations, US Deputy Secretary of State, William Burns, visited Pakistan on 9 May 2014 and personally met key agents within Pakistan's military and political leadership and instructed them to take action against militants launching attacks on American forces in Afghanistan. This was followed by US Congress linking aid to Pakistan to military operations in Waziristan and now US has provided aid for military operations in North Waziristan from the Coalition Support Fund.

Accompanying her demands for operations in North Waziristan, America used her own intelligence and private military, the Raymond Davis network, to orchestrate attacks against Pakistan's armed forces and civilians, in order to blacken the reputation of the tribal resistance and create divisions within Pakistan. It is through these false flag attacks, organized by America's terrorist network and blamed on the sincere tribal resistance, that America aims to malign the pure Jihad against the kuffar occupiers, so that her agents in Pakistan's leadership are able to execute her plan. This is why America sees such attacks as a “silver lining.” On 12 October 2012, Victoria Nuland, the US State Department’s spokesperson, said, “So obviously, the degree to which the Pakistani people turn against them help their government to go after them. That would be, perhaps, a silver lining from this horrible tragedy.”

As for the Raheel-Nawaz regime, it has loyally assisted the Americans every step of the way. Until today, it keeps the door open for America's terrorist network within Pakistan, allowing its personnel to roam freely in the sensitive areas to gather information for attacks, freeing its spies whenever they are caught and securing its lairs, which are found in the residential areas as well as military areas. Then, the traitorous regime plays an active role in blackening the reputation of Jihad, acting as mouthpieces for the Americans, deliberately mixing up the sincere Mujahideen who fight the Americans with those shadowy figures that attack the armed forces. On Wednesday 25 June, the Prime Minister's Adviser on National Security and Foreign Affairs, Sartaj Aziz, declared, “There is no distinction between the good Taliban and bad Taliban and the military operation was being conducted across the board.” Then on 26 June 2014, Inter-Services Public Relations (ISPR) Director General, Major General Asim Saleem Bajwa, said, “For the military, there will be no discrimination among Tehreek-i-Taliban Pakistan (TTP) groups or Haqqani network, all terror groups are going to be eliminated.” And finally this criminal regime deploys our armed forces and security personnel in the tribal areas, to fight their own Muslim brothers in a miserable war of Fitnah, burning pure Muslim blood on both sides as a fuel to secure America's Raj and plunging the people of the region into homelessness and despair! And this is the real double game against our armed forces.

O Muslims of Pakistan!

The traitors within Pakistan's military and political leadership are toiling day and night to strengthen the American occupation of Afghanistan. They care not for the Muslims of the tribes or the armed forces or the civilians in their blind obedience to our enemies. Moreover, they do so at a time when America is weak, stumbling and collapsing. From Syria, to Iraq to Afghanistan, America's cowardly troops fear the Muslim fighter, even if he is armed with meager weapons. America's collapsing economy is unable to stretch to fulfill the demands of its over-extended and shaking Raj. Indeed, America fears entering in to a conflict with Muslim groups, so what to speak of Pakistan's armed forces, the world's most powerful Muslim armed forces, if they were to be mobilized to raise the word of Allah (swt) the highest, backed with the support and dua of the entire Ummah? Restore to Ramadhan its right, victory over the enemy, by striving to secure the return of the mighty Islamic Khilafah state, that will mobilize all your resources for the sake Allah (SWT) and His Messenger (SAW).

O officers of Pakistan’s armed forces!

Matters have gone far enough, red lines have been crossed and more are to be crossed. And it is all upon you, as you have the means to end the treachery and destruction. Act now. Uproot these traitors and grant the Nussrah (Material Support) to Hizb ut-Tahrir, under its Ameer the noble Sheikh Ata ibn Khaleel Abu Ar-Rashtah. Only then will you be led by a righteous Khaleefah, using your force to end the occupation of Afghanistan and rid the Muslim Lands of all kafir domination. Allah (swt) says:

يٰأَيُّهَا ٱلَّذِينَ آمَنُواْ هَلْ أَدُلُّكمْ عَلَىٰ تِجَارَةٍ تُنجِيكُم مِّنْ عَذَابٍ أَلِيمٍ ط تُؤْمِنُونَ بِٱللَّهِ وَرَسُولِهِ وَتُجَاهِدُونَ فِى سَبِيلِ ٱللَّهِ بِأَمْوَالِكُمْ وَأَنفُسِكُمْ ذٰلِكُمْ خَيْرٌ لَّكُمْ إِن كُنتُمْ تَعْلَمُونَ ط يَغْفِرْ لَكُمْ ذُنُوبَكُمْ وَيُدْخِلْكُمْ جَنَّاتٍ تَجْرِى مِن تَحْتِهَا ٱلأَنْهَارُ وَمَسَاكِنَ طَيِّبَةً فِى جَنَّاتِ عَدْنٍ ذٰلِكَ ٱلْفَوْزُ ٱلْعَظِيمُ

“O You who believe! Shall I guide you to a commerce that will save you from a painful torment. That you believe in Allah and His Messenger (Muhammad), and that you strive hard and fight in the Cause of Allah with your wealth and your lives, that will be better for you, if you but know! (If you do so) He will forgive you your sins, and admit you into Gardens under which rivers flow, and pleasant dwelling in Gardens of 'Adn - Eternity ['Adn (Edn) Paradise], that is indeed the great success”

(Al-Saff:10-12)

Hizb ut-Tahrir                                                                                                     1st July 2014 CE

Wilayah Pakistan                                                                                            3rd Ramadhan 1435

بسم الله الرحمن الرحيم

شمالی وزیرستان آپریشن افواجِ پاکستان سے غداری ہے

رمضان وہ مہینہ ہےجو چودہ سو سال تک دشمن کفار کے خلاف کامیابی کا مہینہ رہا ہے اور اس مہینے میں مسلمان فتح کی خوشیاں مناتے رہے ہیں۔ آج اسی ماہِ رمضان میں راحیل-نواز حکومت شمالی وزیرستان میں فوجی آپریشن کر رہی ہے۔ لیکن افسوس کہ شمالی وزیرستان میں کیا جانے والا یہ فوجی آپریشن خوشیاں منانے کا مقام نہیں بلکہ یہ افواجِ پاکستان کے خلاف سنگین غداری ہے، جس کا مقصد افواجِ پاکستان کی اِس صلاحیت کو تباہ کرنا ہے کہ وہ خطے کے متعلق امریکہ کے زہریلے منصوبے کا سامنا کر سکے اور اسے ناکام بناسکے۔

امریکہ اِس وقت، دنیا کی واحد مسلم ایٹمی طاقت پاکستان کی دہلیزپر،یعنی افغانستان میں، اپنی موجودگی کو مستقل شکل دینے کی کوشش کر رہا ہے۔ یہ موجودگی محدود انخلاء کے پردے میں حاصل کی جارہی ہے، جس کے تحت افغانستان میں امریکہ کے ہزاروں فوجی و نجی سکیورٹی اہلکار اور کئی فوجی اڈے برقرار رہیں گے۔ تاہم افغانستان پر قبضے کے پہلے دن سے امریکہ اس بات سے آگاہ ہے کہ اُس کے منصوبے کواگر کوئی خطرہ ہے تو وہ افواجِ پاکستان سے ہے اگر اِس فوج کی باگ ڈور ایک مخلص اسلامی قیادت کے ہاتھ میں ہو۔ مارچ 2009 میں امریکی سینٹرل کمانڈ (CENTCOM) کے کمانڈ ر کے مشیر ڈیوڈ کل کلین نے یہ بیان دیا: "پاکستان کی آبادی 173 ملین ہے، اس کے پاس 100 ایٹمی ہتھیاراور امریکہ سے بڑی فوج ہے...ہم ایسی صورتِ حال کےنزدیک پہنچ گئے ہیں کہ(پاکستان میں) انتہاپسند اقتدار پر قابض ہو سکتے ہیں... اور اب تک دہشت گردی کے خلاف جنگ میں ہم نےجو کچھ دیکھا ہے وہ اس (خطرے) کے مقابلے میں کچھ بھی نہیں"۔ 16نومبر 2009ء کو نیویارکر میں شائع ہونے والے مضمون میں بیان کیا گیا کہ "اصل خطرہ بغاوت کا ہے کہ افواجِ پاکستان میں موجود انتہا پسند بغاوت کر سکتے ہیں...اوبامہ انتظامیہ کے ایک سینئر عہدیدار نے حزب التحریر کا تذکرہ کیا ...جس کا مقصد خلافت کا قیام ہے"۔

امریکہ اس بات سے بخوبی واقف ہے کہ پاکستان کی افواج مسلم سرزمین سے غیر ملکی افواج کے قبضے کو ختم کرنے کی بھر پور صلاحیت رکھتی ہیں۔ اس بات کا مشاہدہ امریکہ افغانستان پر سوویت یونین کے حملے کے وقت کر چکا ہے کہ کس طرح افواجِ پاکستان کی اعلیٰ صلاحیتوں کی حامل انٹیلی جنس ایجنسی (ISI) نے قبائلی جنگجوؤں کو روسی قبضے کے خلاف منظم قوت میں تبدیل کر دیا اور روس کو اس قدر لہو لہان کیا کہ وہ افغانستان سے بھاگنے پر مجبور ہو گیا اوراسے کبھی دوبارہ لوٹ کر آنے کی ہمت نہیں ہوئی۔ اور آج جب امریکہ بذاتِ خود افغانستان پر حملہ آور ہے تو ماضی کی طرح افواجِ پاکستان آج امریکہ کو بھی یہاں سے ہمیشہ کے لیے نکالنے کی صلاحیت رکھتی ہیں۔ امریکہ یہ بھی جانتا ہے کہ اس خطے میں پاکستان کی تزویراتی گہرائی (Strategic Depth) میں شمالی وزیرستان ایک اہم مقام رکھتا ہے اور اس سرزمین اور اس کے لوگوں کو بیرونی خطرات سے بچانےکا اہم ذریعہ ہے۔

لہٰذا مسلمانوں کو تقسیم کرنے، افواجِ پاکستان کو خانہ جنگی کی دلدل میں دھکیلنے اور پاکستان کی تزویراتی گہرائی کوکا ٹ ڈالنے کے لئے، امریکہ نے ستمبر 2011 سے شمالی وزیرستان میں فوجی آپریشن کے مطالبے کو شدیدتر کر دیا۔ موجودہ آپریشن کے شروع ہونے سے چند ہفتوں قبل امریکہ کے نائب سیکریٹری خارجہ ویلیم برنز نے 9 مئی 2014 کو پاکستان کا دورہ کیا اور سیاسی و فوجی قیادت میں موجود اپنے ایجنٹوں سے ملاقاتیں کیں اور انہیں شمالی وزیرستان میں اُن جنگجوؤں کے خلاف کاروائی کا حکم دیا جو افغانستان میں امریکی افواج کے خلاف محاذ آرا ہیں۔ پھر امریکی کانگریس نے پاکستان کی امداد کو شمالی وزیرستان میں آپریشن سے مشروط کردیا اور اب امریکہ نے شمالی وزیرستان میں آپریشن کے لئے کولیشن سپورٹ فنڈ (CSF) سے پاکستان کو رقم بھی فراہم کردی ہے۔

شمالی وزیرستان میں فوجی آپریشن شروع کرنے کے مطالبے کے ساتھ ساتھ امریکہ نے اپنی انٹیلی جنس اور پرائیویٹ فوج (ریمنڈ ڈیوس نیٹ ورک ) کو پاکستان کی افواج اور شہریوں پر حملے کروانے کے لئے استعمال کیا تا کہ قبائلی مزاحمت کے متعلق منفی رائے عامہ پیدا کی جائے اور افواجِ پاکستان اور قبائلیوں کے درمیان تفریق پیدا کی جائے۔ ان حملوں اور بم دھماکوں، کہ جن کی منصوبہ بندی امریکی دہشت گرد نیٹ ورک کرتا ہے اور پھر ان کا الزام مخلص قبائلی مزاحمت کاروں پر ڈال دیا جاتا ہے، کاہدف یہ ہے کہ قابض امریکی افواج کے خلاف جہاد کو بدنام کیا جائے اور یوں پاکستان کی قیادت میں موجود امریکی ایجنٹوں کو امریکہ کے منصوبے کو عملی جامہ پہنانے میں سہولت ہو سکے۔ یہی وجہ ہے کہ امریکہ اس قسم کے حملوں اور بم دھماکوں کو "مثبت "سمجھتا ہے۔ 12 اکتوبر 2012 کو امریکی محکمہ خارجہ کی ترجمان ویکٹوریہ نولینڈ نے کہا کہ "یقیناً جس قدر پاکستانی عوام کی رائے عامہ ان (عسکری جنگجوؤں) کے خلاف ہوتی ہے، حکومت کو اُن کے خلاف جانے میں اسی قدرمدد ملتی ہے۔ یہ شاید اس خوفناک سانحہ کا 'مثبت' پہلو ہے"۔

جہاں تک راحیل-نواز حکومت کا تعلق ہے تو اس نےتمام تر منصوبے میں ہر قدم پر وفاداری کے ساتھ امریکہ کی مدد کی ہے۔ آج بھی اس حکومت نے امریکی دہشت گرد نیٹ ورک کے لئے پاکستان کے دروازے کھول رکھے ہیں اور اِن امریکی اہلکاروں کو پاکستان کے حساس ترین علاقوں میں معلومات کے حصول کے لئے آزادانہ گھومنے پھرنے کی اجازت ہے تا کہ پھروہاں پر حملے کروائے جاسکیں۔ ان امریکی دہشت گردوں کو پاکستان کے فوجی و شہری علاقوں میں پناہ گاہیں میسر ہیں اور جب بھی کوئی امریکی جاسوس رنگے ہاتھوں پکڑا جاتا ہے تو حکومت اسے رہا کردیتی ہے۔ یہ غدار حکومت امریکہ کی زبان بولتے ہوئے جہاد کو بدنام کرنے کے لیے متحرک کردار ادا کرتی ہے اور جانتے بوجھتے ہوئے اُن مخلص مجاہدین کو جو امریکہ کے خلاف جہاد کررہے ہیں، ان خفیہ اور مبہم کرداروں سے جوڑ دیتی ہے جو افواجِ پاکستان پر حملے کرتے ہیں۔ 25 جون 2014 کو وزیر اعظم کے مشیر برائے قومی سلامتی و خارجہ امور سرتاج عزیز نے اعلان کیا کہ "اب اچھے طالبان اور برے طالبان کے درمیان فرق نہیں رکھا جائے گا اور فوجی آپریشن سب کے خلاف کیا جارہا ہے"۔ پھر 26 جون 2014 کو فوج کے تعلقات عامہ کے شعبے ISPRکے ڈائریکٹر جنرل، میجر جنرل عاصم سلیم باجوہ نے کہا کہ "فو ج کے لیے تحریکِ طالبان پاکستان اور حقانی نیٹ ورک کے درمیان کوئی فرق نہیں، تمام دہشت گرد گروہوں کا خاتمہ کردیا جائے گا"۔ اور آخر کار اس مجرم حکومت نے ہماری افواج اور سکیورٹی فورسز کو قبائلی علاقوں میں اپنے ہی مسلمان بھائیوں کے خلاف فتنے کی جنگ لڑنے کے لئے بھیج دیا جس کے نتیجے میں دونوں جانب سے بہنے والا مسلمانوں کاخون امریکی راج کو مستحکم کرنے کے لئے استعمال ہوگا، جبکہ شمالی وزیرستان کے لاکھوں لوگ بے گھر اور تباہ حال ہو جائیں گے۔ یہ ہے وہ اصلی ڈبل گیم جو ہماری افواج کے خلاف کھیلی جارہی ہے۔

اے پاکستان کے مسلمانو! سیاسی و فوجی قیادت میں موجود غدار افغانستان پر امریکی قبضے کو مستحکم کرنے کے لئے دن رات ایک کررہے ہیں۔ مسلمانوں کے دشمنوں کی اندھی اطاعت میں انہیں قبائلی مسلمانوں یا افواج پاکستان یا عام شہریوں کی کوئی پروا نہیں ہے۔ اورزیادہ افسوسناک بات یہ ہے کہ یہ غدار ایک ایسے وقت امریکہ کو مدد فراہم کررہے ہیں جب وہ کمزوری سے لڑکھڑا رہا ہےاور گررہا ہے۔شام سے لے کر عراق اور افغانستان تک امریکہ کی بزدل افواج مسلمان جنگجوؤں کا سامنا کرنے سے سخت خوف کھاتی ہیں، اگرچہ امریکہ کے مقابلے میں ان کا اسلحہ معمولی نوعیت کا ہے۔ امریکہ کی گرتی ہوئی معیشت اتنا سرمایہ فراہم کرنے سے قاصر ہے جو اس کے عالمی راج کو پھیلانے اور برقرار رکھنے کے لئے درکار ہے۔ تو اگرامریکہ مسلمان گروہوں کے خلاف خود میدان میں اترنے سے خوفزدہ ہے تو پھر اُس وقت امریکہ کے خوف کا کیا عالم ہو گا جب مسلم دنیا کی سب سے طاقتور پاکستانی فوج اللہ کے کلمے کو سربلند کرنے کے لئے حرکت میں آئے گی اور اس کے پیچھے پوری امت کی مدد اور دعائیں ہوں گی؟ پس اے مسلمانو ! رمضان کو اس کا حق واپس دلاؤ، عظیم اسلامی ریاستِ خلافت کے قیام کے ذریعے رمضان کو ایک مرتبہ پھر دشمن کفار کے خلاف فتح کا مہینہ بناؤ۔ وہ خلافت کہ جو تمہارے وسائل کو اللہ سبحانہ و تعالٰی اور اس کے رسولﷺ کے لئے حرکت میں لائے گی۔

اے افواج پاکستان کے افسران! معاملہ بہت بڑھ چکا ہے، کئی سرخ لکیریں پار کی جاچکی ہیں اور کئی پار ہونے کے قریب ہیں۔اب یہ آپ پر منحصر ہے کہ آپ اس غداری اور تباہی کا خاتمہ کریں کہ آپ کے پاس ہی اس کام کے تمام وسائل موجود ہیں۔ ابھی اور اسی وقت حرکت میں آئیں۔ ان غدّاروں کو اُکھاڑ پھینکیں اور حزب التحریر کو نُصرہ فراہم کریں جو شیخ عطا بن خلیل ابو رَشتہ کی قیادت میں سرگرمِ عمل ہے۔ صرف اسی صورت میں آپ کو ایک خلیفہ راشد کی قیادت میسر آسکے گی، جو آپ کی قوت کو افغانستان پر کفار کے قبضے کا خاتمہ کرنے اور اسلامی علاقوں کو کفار کی بالادستی سے مکمل طور پرآزاد کرانے کے لیے استعمال کرے گا۔ اللہ سبحانہ و تعالیٰ نے ارشاد فرمایا:

يٰأَيُّهَا ٱلَّذِينَ آمَنُواْ هَلْ أَدُلُّكمْ عَلَىٰ تِجَارَةٍ تُنجِيكُم مِّنْ عَذَابٍ أَلِيمٍ - تُؤْمِنُونَ بِٱللَّهِ وَرَسُولِهِ وَتُجَاهِدُونَ فِى سَبِيلِ ٱللَّهِ بِأَمْوَالِكُمْ وَأَنفُسِكُمْ ذٰلِكُمْ خَيْرٌ لَّكُمْ إِن كُنتُمْ تَعْلَمُونَ - يَغْفِرْ لَكُمْ ذُنُوبَكُمْ وَيُدْخِلْكُمْ جَنَّاتٍ تَجْرِى مِن تَحْتِهَا ٱلأَنْهَارُ وَمَسَاكِنَ طَيِّبَةً فِى جَنَّاتِ عَدْنٍ ذٰلِكَ ٱلْفَوْزُ ٱلْعَظِيمُ

"اے ایمان والو! کیا میں تمہیں وہ تجارت بتلا دوں جو تمہیں دردناک عذاب سے بچا لے؟ اللہ اور اس کے رسول ﷺپر ایمان لاؤ اور اللہ کی راہ میں جہاد کرو۔ یہ تمھارے لئے بہتر ہے اگر تم علم رکھتے ہو۔ اللہ تمھارے گناہوںکومعاف فرما دے گا اور تمہیں جنت کے باغوں میں پہنچائے گا جن کے نیچے نہریں جاری ہوں گی اور پاکیزہ گھروں میں جو ہمیشہ کی بہشت میں ہوں گے ، اوریہی بڑی کامیابی ہے"

(الصف:10-12)

3 رمضان 1435ھ                                                                                                                   حزب التحریر

یکم جولائی 2014 م                                                                                                                            ولایہ پاکستان